جوقومیں ثقافت کو فراموش کر دیتی ہیں وہ تاریخ کا حصہ نہیں ہوتیں، عارف لوہار

جوقومیں ثقافت کو فراموش کر دیتی ہیں وہ تاریخ کا حصہ نہیں ہوتیں، عارف لوہار

لاہور(این این آئی) لوک گلوکار عارف لوہار نے کہا ہے کہ جو قومیں اپنی ثقافت کو فراموش کر دیتی ہیں وہ آنے والے وقتوں میں تاریخ کا حصہ نہیں ہوتیں ، میرے والد نے گلوکاری کے ذریعے پنجاب کی ثقافت کا جو دیا جلایا تھا اس کو میں نے روشن رکھا ہوا ہے اور میں چاہتا ہوں کہ اس دیے سے اور بھی دیے جلائے جائیں تاکہ دنیا بھر میں پاکستان کی ثقافت روشن ہو ۔اپنے ایک انٹرویو میں نھوں نے کہا کہ لیجنڈ اداکاروں کی جگہ کوئی نہیں لے سکتا ، جو کام میرے والد محترم عالم لوہار نے کیا تھا میں ان جیسا کام نہیں کر سکتا لیکن مجھے فخر ہے کہ میری شناخت میرے والد عالم لوہار ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ میں نے گلوکاری میں کوئی شاگرد نہیں رکھا لیکن جو سیکھنا چاہے اس کو میں ضرور سکھاؤں گا ۔ عارف لوہار نے اس بات کی نفی کی وہ کسی فلم میں کام کر رہے ہیں ، جو کام میں اچھے طریقے سے کر لوں وہی میرے لیے بہتر ہے میری پوری کوشش ہوتی ہے کہ میں بیرون ملک اپنے ملک کا نام روشن کروں اور اس کیلئے میں محنت کرتا ہوں اور جب بیرون ملک پذیرائی ملتی ہے تو مجھے اس کی بہت زیادہ خوشی ہوتی ہے۔

مزید : کلچر