حفیظ کے باؤلنگ ایکشن کے معاملے پراپیل کرنا چاہیے تھی،ذکااشرف

حفیظ کے باؤلنگ ایکشن کے معاملے پراپیل کرنا چاہیے تھی،ذکااشرف

لاہور(آئی این پی) پاکستان کرکٹ بورڈ کے سابق چیئرمین ذکا اشرف نے کہا ہے کہ پی سی بی کو محمد حفیظ کے باؤلنگ ایکشن کے معاملے پر آئی سی سی سے اپیل کرنا چاہیے تھی،پاکستانی باؤلروں کیخلاف سازش کی جارہی ہے،ورلڈ کپ سے قبل محمد حفیظ اور سعید اجمل پر پابندی کے پیچھے بھارتی لابی تھی ،پی سی بی بھارتی کرکٹ بورڈ کو خوش کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہا ہے تاہم اس کے باوجود اسے بی سی سی آئی سے اپنے حق میں نتائج نہیں مل رہے،بی سی سی آئی پاکستان کی کرکٹ کو تباہ کرنے میں مصروف ہے ، پی سی بی نے بگ تھری کی حمایت کی جو کہ بھارت کا منصوبہ تھا تاہم اس کے باوجود ابھی تک باہمی سیریز کی تصدیق نہیں کی گئی۔نجی ٹی وی کو دئیے گئے انٹرویو میں ذکا اشرف نے کہا کہ پاکستانی گیند بازوں کے خلاف سازش رچی جارہی ہے۔انہوں نے اس سلسلے میں سعید اجمل اور محمد حفیظ کا حوالہ دیا جنہیں ورلڈ کپ سے قبل بین الاقوامی کرکٹ میں باؤلنگ کرنے سے روک دیا گیا۔انہوں نے کہا کہ انگلینڈ میں بھی اسی طرح کی سہولیات میسر ہیں تاہم مجھے ان کے نتائج پر بھی بھروسہ نہیں۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ پی سی بی انڈین کرکٹ بورڈ کو خوش کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہا ہے تاہم اس کے باوجود اسے بی سی سی آئی سے اپنے حق میں نتائج نہیں مل رہے۔انہوں نے کہا پی سی بی اور بی سی سی آئی نے گزشتہ سال کے ایم او یو پر دستخط کیے تھے جس کے تحت دونوں ٹیمیں 2015 سے 2023 تک چھ باہمی سیریز کھیلیں گی اور اس سلسلے کی پہلی سیریز متحدہ عرب امارات میں کھیلی جانی ہے جس کی میزبانی پاکستان کرے گا۔تاہم بی سی سی آئی صرف اسی وقت اس معاہدے پر عمل کرسکے گا جب ہندوستان کی حکومت اس کی اجازت دے گی۔تاحال دونوں ممالک کے درمیان تناؤ کو دیکھتے ہوئے اس بات کے امکان بہت ہی کم رہ گئے ہیں کہ یہ سیریز اسی سال ممکن ہوسکے گی۔دوسری جانب جب حفیظ کے معاملے پر ایک پی سی بی آفیشل سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ بورڈ میں اس بات پر اتفاق پایا جاتا ہے کہ حفیظ کی اپیل کا معاملہ ٹھوس بنیادوں پر مبنی نہیں۔آفیشل کے مطابق ٹیسٹ کے دوران متعدد مرتبہ لیب آفیشل نے حفیظ کو گال ٹیسٹ کے دوران کی گئی تمام گیندیں کروانے کی درخواست کی تاہم انہوں نے وہ تمام گیندیں نہیں کروائیں۔انہوں نے بتایا کہ ٹیسٹ کے دوران حفیظ کے بازو کا خم 19 ڈگری پایا گیا جبکہ اجازت صرف 15 ڈگری کی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ٹیسٹ کے لیے چنئی کا انتخاب اس لیے کیا گیا کیوں کہ ماضی میں یہ واحد لیب ہے جہاں سے متعدد کرکٹرز کلیئر ہوئے ہیں جن میں خود حفیظ اور اجمل شامل ہیں۔پی سی بی آفیشل کا مزید کہنا تھا کہ حفیظ نے خود چنئی میں ٹیسٹ کروانے کی درخواست کی تھی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی