0.3فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس کافیصلہ تاجروں کیساتھ اعلانِ جنگ ہے : کاشف چوہدری

0.3فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس کافیصلہ تاجروں کیساتھ اعلانِ جنگ ہے : کاشف چوہدری

اسلام آباد(آن لائن) مرکزی انجمن تا جران اسلام آباد کے صدر محمد کاشف چوہدری نے کہا ہے کہ اگر حکومت نے 0.3فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کا فیصلہ واپس نہ لیا تو پانچ اگست کو ملک گیر یوم احتجاج اورشٹر ڈاؤن ہڑتال کی جائے گی ۔انہوں نے کہا اگر حکومت ملک میں معاشی سر گرمیوں کو بحال اور بینکنگ انڈسٹری کو تباہی سے بچانا چاہتی ہے تو اس ود ہولڈنگ ٹیکس واپس لینا پڑے گا ۔ کاشف چوہدریء نے کہا حکومت سے مذاکرات کرنے والے اور 0.3فیصد ٹیکس پر کو تسلیم کرنے والے اب کس منہ سے یکم اگست کو ہڑتال کا اعلان کر رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے اسلام آباد اور اس کے گرد ونواح کی مارکیٹوں کے عہدیداران کے مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر افتخا ر شہزادہ ،ملک ظہیر ،خواجہ خلیل سالار ،رانا عبدالقدیر ،راجہ فیاض گل ،چوہدری عبید ،نعیم اختر عوان،ملک عارف ،امان اللہ چیمہ ،نوید عباسی ،ضیاء احمد ،طاہر ایوب ،عبید عباسی اور دیگر تاجر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔محمد کاشف چوہدری نے کہا تاجربرادری حکومت کے فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس اس فیصلے کو اعلانِ جنگ تسلیم کرتی ہے ۔ ملک میں پہلے ہی تجارتی سر گرمیاں ماند پڑ چکی ہیں۔

اس فیصلے کہ نتیجے میں ملک میں بلیک اکانومی ،ہنڈی اور حوالے کے کاروبار کو فروغ ملے گا ۔ ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے کہ اس ٹیکس کو واپس لے کر ملک کی اکانومی کو تباہی سے بچائے ۔ انہوں نے حکومت سے مذاکرات کرنے والے تاجروں کو بھی دعوت دی کے وہ حکومت کی بی ٹیم بننے کی بجائے حقیقی تاجر نمائندوں کے ساتھ مل بیٹھیں اور تاجروں میں انتشار پھیلانے کی بجائے 5اگست کو ملک گیر ہڑتال کا حصہ بنیں ۔

مزید : کامرس