ایس ای سی پی ‘سٹاک مارکیٹ کے تجزیہ نگاروں کیلئے قواعد جاری

ایس ای سی پی ‘سٹاک مارکیٹ کے تجزیہ نگاروں کیلئے قواعد جاری

اسلام آباد(آن لائن) سیکورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان نے کیپیٹل و سٹاک مارکیٹ کی ٹریڈنگ اور دیگر مالیاتی معاملات پر رائے زنی کرنے والے تجزیہ نگاروں اور محققین کے لیے قوائد و ضوابط(ریگولیشنز) جاری کر ئے ہیں۔ نئے سیکورٹیز ایکٹ 2015کے تحت جاری ہونے والے ریگولیشنزکا مقصد سرمایہ کاری اور فنانشل مارکیٹ بارے تحقیق اور تجزیہ کرنے والے ماہرین و محققینکی غیر جابنداری کو یقینی بناناہے تا کہ ان کی آراء کسی بھی قسم کے مفاداتی تصادم سے آزاد ہوں۔ یہ قوائدتمام شراکت داروں ( سٹیک ہولڈرز )کے ساتھ تفصیلی مشاورت اور عوامی رائے حاصل کرنے کے بعد جاری کئے گئے ہیں۔ کیپیٹل مارکیٹ کے تجزیہ نگاروں اور محققین کے لئے جاری کئے گئے ریگولیشن سیکورٹیز کمیشن کی بین الاقوامی تنظیم آئیسکو کے معیارات کے مطابق ہیں اور ان کا مقصد سٹاک مارکیٹ کے بارے تجزیہ اور ریسرچ پیش کرنے والے ماہرین کی آراء کو زیادہ سے زیادہ آزاد اور شفاف بنانا ہے۔

اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ ان کے رائے یا تحقیق کے نتائج کسی بھی قسم کے مفاداتی تصادم سے مبراء ہوں۔ کیپیٹل مارکیٹ کے ماہرین کے آراء میں شفافیت آنے سے نہ صرف کارپوریٹ گورننس میں بہتری آئے گی بلکہ مارکیٹ میں ہونے والی متوقع بے ضابطگیوں میں کمی بھی ممکن ہو گی۔ ان قوائد کے تحت تمام مارکیٹ ریسرچ کے اداروں کو اپنے محققین تجزیاتی آراء اور ان کے ذاتی مفادات سے آزاد رکھنے لے لئے پالیسیاں تشکیل دینا ہوں گی اورتجزیہ نگاروں کی کم از کم تعلیمی قابلیت ‘ ان کی عمومی ذمہ داریوں اور ریکارڈ رکھنے اور ریگولیشن پر کے پابند ہوں گے۔ ان قوائد میں ان کی خلاف ورزیوں کی صورت میں ضروری انضباطی کارروائی سے متعلق شقیں بھی شامل ہیں۔

مزید : کامرس