پیاف نے اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں اضافہ کو تشویشناک قرار دیدیا

پیاف نے اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں اضافہ کو تشویشناک قرار دیدیا

لاہور ( کامرس رپورٹر)پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسو سی ایشن فرنٹ(پیاف )کے چیئرمین عرفان اقبال شیخ نے اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں اضافہ کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں کمی سے صنعتی پیداوار متاثر ہوگی کیونکہ روپے کی بے قدری کے باعث درآمدی خام مال کی قیمت بڑھے گی، جس کی وجہ سے ملک کے اندر ہونے والے مصنوعات کی پیداواری لاگت میں اضافہ ہوگااور ملک میں مہنگائی کی شرح میں بھی نمایاں اضافہ ہوگا۔ چےئرمین پیاف نے کہا کہ سٹیٹ بنک اور فاریکس کمپنیاں بھی اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کریں اور ڈالر کی قدر میں اضافہ روکنے کے لیے سخت ترین اقدامات کریں۔ عید سے پہلے ڈالر مناسب ریٹ پر مل رہا تھامگر عید کی چھٹیاں ختم ہوتے ہی اور حج سیزن آتے ہی ڈالر کی قدر میں اضافہ ہونا شروع ہوگیا ہے۔ عرفان اقبال شیخ نے کہا کہ ڈالر کی قیمت بڑھنے سے صنعتی پیداوار متاثر ہونے کے ساتھ ساتھ ملک پر بیرونی قرضوں کا بوجھ بھی بڑھے گا اس لیے ایسے اقدامات کیے جائیں جن کے باعث ادائیگیوں میں تواز ن قائم ہو۔

اور تجارتی خسارہ میں کمی ہو۔انہوں نے کہا کہ ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ ملکی معیشت کیلئے خطرہ کی گھنٹی ہے ، ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت ڈالر کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے سخت ترین اقدامات کرے اور ڈالر کی قیمت کو 100روپے سے بڑھنے سے روکے کیونکہ ڈالر کی قیمتوں میں اضافہ سے ملک میں مہنگائی بھی بڑھ رہی ہے۔

مزید : کامرس