واپڈا گوجرانوالہ ڈویژن نے اضافی یونٹ کی مد میں صارفین سے کروڑوں روپے اکھٹے کر لئے

واپڈا گوجرانوالہ ڈویژن نے اضافی یونٹ کی مد میں صارفین سے کروڑوں روپے اکھٹے ...

 لاہور(ارشد محمود گھمن) گوجرانوالہ الیکٹرک پاور کمپنی(گیپکو) واپڈا گوجرانوالہ ڈویژن نے صارفین سے اضافی یونٹ کی مد میں کروڑوں روپے اکٹھے کر لیے۔سائلین اعلیٰ افسران سے شکایات کیلئے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئے۔ماتحت عملہ کا اضافی یونٹ ختم کرنے سے انکار۔تمام بل جمع کروائے جائیں،ورنہ بجلی کا کنکشن(میٹر) منقطع کر دیا جائے گا۔صارفین نے شکایات کا ڈھیر لے کر وفاقی محتسب اعلیٰ کا رخ اختیار کر لیا۔ وفاقی محتسب اعلیٰ کا کروڑوں روپے کی کرپشن کو بے نقاب کر نے کیلئے تفتیش کا دائرہ کا ر وسیع کر نے پر غور۔تفصیلات کے مطابق واپڈا گیپکو گوجرانوالہ ڈویژن ضلع سیالکوٹ سب ڈویژن ڈیفنس سرکل کے صارف نے تحریر ی طور پر درخواست میں الزام عائد کیا ہے کہ سب ڈویژن ڈیفنس سرکل میں میٹر ریڈرز نے اعلیٰ حکام کے ساتھ ملی بھگت کر کے میٹر کیمرہ سسٹم کیے جانے پر اس کے 300یونٹ بل میں اضافی ڈال کر بل کی رقم وصول کر لی۔جبکہ ریکارڈ میں اضافی 300یونٹ کے ڈیٹا کو کمپیوٹرائزڈ بل میں ردوبدل کر کے بل کے اضافی یونٹ ختم کر کے سابقہ یونٹ کے حساب سے ریڈنگ کر لی۔یاد رہے کہ وقاص کے میٹر نمبر ST-5470012 پر ماہ فروری 2015کو2074یونٹ کا استعمال کیا گیا تھا ۔اور میٹر ریڈر نے 300یونٹ کا اضافہ کر کے بل پر 2360یونٹ درج کر لیے ۔ ماہ مارچ میں میٹر ریڈنگ کی درستگی کیلئے اپنی غفلت کو چھپانے کی خاطر سابقہ یونٹ 2074 اور موجودہ بھی 2074یونٹ ڈال کر 300یونٹ ریکارڈ میں خور د برد کر لیے ۔ماہ فروری 2015کا بل باقاعدہ طور پر یونٹ2360کا بل بنک میں جمع کر وا دیا گیا۔جبکہ عملہ نے 300یونٹ کم کر کے سابقہ یونٹ کا اندراج کر دیا۔اسی طرح گیپکو کے عملہ نے ڈویژن بھر میں میٹر کیمرہ فوٹو سسٹم کے بہانے صارفین کے بلوں میں اضافی یونٹ ڈال کر کروڑوں روپے وصول کر لیے۔اور کمپیوٹر ریڈنگ انٹری میں ردوبدل کر کے ہزاروں صارفین کو چونا لگا لیا۔جو دفاتر کے چکر لگا لگا کر بے بسی اور مایوسی کے عالم میں اپنے گھروں میں چپ ہوکر بیٹھنے کو مجبور ہو گئے۔کئی صارفین نے وفاقی محتسب اعلیٰ کو محکمہ کی کرپشن کو بے نقاب کرنے کیلئے درخواستیں بھجوانا شروع کر دیں۔

گیپکو

مزید : صفحہ آخر