جنوبی پنجاب میں مبینہ پولیس مقابلہ ، کالعدم لشکر جھنگوی کے سربراہ ملک اسحاق اور ان کے دوبیٹوں سمیت 14افرادمارے گئے

جنوبی پنجاب میں مبینہ پولیس مقابلہ ، کالعدم لشکر جھنگوی کے سربراہ ملک اسحاق ...
جنوبی پنجاب میں مبینہ پولیس مقابلہ ، کالعدم لشکر جھنگوی کے سربراہ ملک اسحاق اور ان کے دوبیٹوں سمیت 14افرادمارے گئے

  

مظفرگڑھ (مانیٹرنگ ڈیسک) تھانہ صدر کی حدود میں مبینہ پولیس مقابلے میں کالعدم لشکر جھنگوی کے سربراہ ملک اسحاق اوران کے دوبیٹوں سمیت 14افراد مارے گئے ہیں ۔

پولیس نے دعویٰ کیاہے کہ آٹھ افراد کی ٹارگٹ کلنگ کے الزام میں حراست میں لیے گئے ملک اسحاق اوران کے بیٹوں کو اسلحہ کی نشاندہی کیلئے شاہ والا کے قریب لے جایاگیاجہاں موجود ان کے ساتھیوں نے طاقت کے زور پر ملزمان چھڑانے کی کوشش کی جس پر مقابلے میں مارے گئے ، ہلاک ہونیوالوں میں ملک اسحاق ، دوبیٹے عثمان ، حق نوازاور سرگرم ساتھی غلام رسول شاہ سمیت 14افرادشامل ہیں جن کا تعلق کالعدم تنظیم سے تھا اور لاشوں کو ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کردیاگیاجہاں مرنیوالوں کا پوسٹمارٹم جاری ہے ۔

پولیس کے مطابق ملزمان سے چار دستی بم ، کلاشنکو ف، تین پستول ،بارود سے بھرے تین کولر، تین سو سے زائد گولیاں اور بارہ بیٹریاں برآمد کرلی گئیں جبکہ چھ افراد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔ پولیس کے مطابق مقابلے میں شعبہ انسداددہشتگردی کے چھ اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں ۔بتایاگیاہے کہ مارے جانیوالے بیشتر افراد اشتہاری ملزم تھے اورانہیں مذہبی دہشتگردبھی قراردیاجاتاہے، یہ بھی اطلاعات ہیں کہ مرنیوالوں میں غلام رسول شاہ کا بیٹا بھی شامل ہے تاہم پولیس نے تصدیق نہیں کی اور بتایاکہ کچھ ہی دیر میں باضابطہ طورپر میڈیا کو بریفنگ دی جائے گی ۔

یادرہے ملک اسحاق کو جنوبی پنجاب میں مخصوص فرقہ کے افراد کی ٹارگٹ کلنگ کے الزام میں چھ دن قبل ہی گرفتار کیاگیاتھا اور اُن کی جماعت کو ن لیگ کی اعلیٰ شخصیت کے قریبی سمجھاجاتاہے ۔

مزید : قومی /Headlines