ملا عمر 2013ءمیں کراچی کے ایک ہسپتال میں فوت ہوئے تھے : افغان حکومت

ملا عمر 2013ءمیں کراچی کے ایک ہسپتال میں فوت ہوئے تھے : افغان حکومت
ملا عمر 2013ءمیں کراچی کے ایک ہسپتال میں فوت ہوئے تھے : افغان حکومت

  

کابل ( مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان کے ایوان صدر نے بھی طالبان سربراہ ملا عمر کی ہلاکت کی تصدیق کر دی ہے لیکن اس کے ساتھ ہی یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ ملا عمر اپریل2013ء میں کراچی میں ہلاک ہوا۔ صدارتی ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں ملا عمر کی ہلاکت کی تصدیق تو کی گئی ہے لیکن ساتھ ہی ساتھ یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ ملا عمر اپریل 2013ء میں پاکستان میں ہلاک ہوا تھا۔ 

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ترجمان افغان نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکورٹی عبدالحسیب صدیقی نے  بھی اس سے قبل اپنے بیان میں کہا تھا کہ ملا عمر سال 2013ءمیں پاکستان کے شہر کراچی کے ایک ہسپتال میں زیر علاج تھے اور اپریل 2013 ءمیں وہ اسی ہسپتال میں انتقال کر گئے تھے ۔ برطانوی نشریاتی ادارے کی جانب سے بھی ان کے انتقال کی تصدیق کی گئی تھی تاہم دوسری جانب ترجمان افغان طالبان نے اس دعوے کی تردید کی ہے اور ان کے مطابق ملا عمر کا انتقال نہیں ہوا اور وہ زندہ ہیں ۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں