برطانیہ میں مقیم پاکستانی اپنی ساس کو قتل کرنے کیلئے وطن واپس آپہنچا، اس انتہائی اقدام کی وجہ ایسی کہ جان کر آپ بھی پریشان ہوجائیں گے

برطانیہ میں مقیم پاکستانی اپنی ساس کو قتل کرنے کیلئے وطن واپس آپہنچا، اس ...
برطانیہ میں مقیم پاکستانی اپنی ساس کو قتل کرنے کیلئے وطن واپس آپہنچا، اس انتہائی اقدام کی وجہ ایسی کہ جان کر آپ بھی پریشان ہوجائیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستانی خاوند دنیا میں جہاں بھی ہوں بیوی کے ساتھ اپنی روایتی بدتمیزی اور مارکٹائی سے باز نہیں آتے اور پھر اس کا خمیازہ بھی بھگتے ہیں کیونکہ وہ بھول جاتے ہیں کہ وہ پاکستان میں نہیں بلکہ دنیا کے کسی ترقی یافتہ ملک میں موجود ہوتے ہیں جہاں خواتین کو بھی برابری کے حقوق حاصل ہوتے ہیں اور بیوی کو محض تھپڑ مارنے پر بھی ان کو سزا مل سکتی ہے۔ ایسے ہی ایک پاکستانی خاوندطارق رانا نے برطانیہ میں اپنی بیوی 28سالہ عائشہ ریاض کو تشدد کا نشانہ بنایا جس پراس نے علیحدگی اختیار کر لی۔

مزید پڑھیں:شوہر کی اپنی بیگم کو غلیظ ترین حرکت پر مجبور کرنے کی کوشش، بھارتی بیوی نے جان ہی لے 

برطانوی قوانین کی وجہ سے اس شوہر کا اپنی بیوی پر تو بس نہ چلا لیکن اس نے بدلہ لینے کے لیے ایک اور گھناؤنا منصوبہ بنا لیا۔طارق رانا برطانیہ سے سفر کرکے پاکستان پہنچا اور اپنے سسرال کے گھر جا کر اپنی 49سالہ ساس غلام آسیہ کو گولیاں مار کر قتل کر دیا۔ اپنی ساس کو قتل کرنے کے بعد وہ برطانیہ فرار ہو گیا لیکن چونکہ وہ برطانوی شہری تھا اس لیے مقتولہ کے شہریوں نے وہاں اس کے خلاف مقدمہ درج کروا دیاجس پر برطانوی پولیس نے اسے گرفتار کر کے عدالت کے سامنے پیش کر دیا۔ عدالت کی طرف سے گزشتہ روز طارق رانا کو عمر قید کی سزا سنادی گئی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس