انڈو نیشیاءمیں ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روک دیا گیا

انڈو نیشیاءمیں ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روک دیا گیا
انڈو نیشیاءمیں ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روک دیا گیا

  

جکارتہ (مانیٹرنگ ڈیسک)انڈو نیشیاءمیں ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روک دیا گیاہے اور ان کی کیس پر نظر ثانی کی درخواست منظور کرلی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق انڈونیشیاءمیں موجود ذوالفقار علی کے دوست جمیل کاکہناتھا کہ پہلے انہیں اطلاع دی گئی کہ 14افراد کو سزائے موت دیدی گئی ہے اور ہم طوفانی بارش میں لاش لینے پہنچے تو وہاں آنے پر پتا چلا کہ سزائے موت پر عملدرآمد رو ک دیا گیاہے اور کیس پر نظر ثانی کی درخواست کو منظور کرلیا گیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کا نام بھی اہل خانہ میں لکھا ہواہے اس لیے انہیں اس تمام معلومات سے آگاہ کیا گیا ۔ان کا کہناتھا کہ آج سزائے موت صرف 4افراد کو دی گئی ہے ۔ان کا کہناتھا کہ ذوالفقار سے اگلی ملاقات پیر کے روز ہو گی جس کے بعد پتہ چلے گا کہ دوبارہ کیس کب سنا جائے گا ۔جمیل کا کہناتھا کہ ذوالفقار علی کے وکیل نے بہت زیادہ کوشش کی جس کے باعث یہ ممکن ہو پایاہے۔دوسری جانب پاکستانی سفیر ایم عاقل ندیم نے بھی ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روکنے کی خبر کی تصدیق کر دی ہے ۔پاکستانی سفیر کا کہناتھا کہ انڈونیشین حکام نے یقین دلایا تھا کہ تحفظات صدر تک پہنچائیں گے ,خوشی ہے کہ ذوالفقار علی کی جان بچ گئی ہے۔ذوالفقار علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روکنے کی اطلاع ملتے ہیں اہل خانہ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ،جس کے بعد ذوالفقار علی کے خاندان والوں نے خوشی کا مال روڈ پر کرنا شروع کر دیاہے ۔دوسری جانب انڈونیشیاءمیں پاکستانی سوسائٹی میں بھی خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے ۔

واضح رہے کہ ذوالفقار پر منشیات کا الزام لگانے والا بھارتی مجرم بھی اپنے بیان سے منحرف ہو گیا تھا کہ یہ منشیات ذوالفقار کی ہے ۔ انڈونیشیا کا میڈیا بھی چیخ چیخ کر ذوالفقار کی بے گناہی کی گواہی دیتا رہا۔

مزید :

قومی -