20اگست کو ہونے والی پاکستان لبیک یارسول اللہ کانفرنس ملتوی کردی گئی

20اگست کو ہونے والی پاکستان لبیک یارسول اللہ کانفرنس ملتوی کردی گئی

  

لاہور(خبر نگار خصوصی)تحریک لبیک یا رسول اللہ نے 20اگست کو ہونے والے کل پاکستان لبیک یارسول اللہ کانفرنس ملتوی کر دی،یہ کانفرنس اب یکم اکتوبر کو مینار پاکستان میں منعقد ہو گی۔ تحریک لبیک یا رسول اللہ ﷺ کے قائدین شیخ الحدیث علامہ خادم حسین رضوی، کنزُ العلماء ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی، پیشوائے اہلِ سُنت پیر محمد افضل قادری، علامہ فاروق الحسن قادری، صاحبزادہ پیر محمد اعجاز اشرفی، پیر سید سرور شاہ، پیر سید مختار اشرف رضوی ، پیر سید ظہیر الحسن شاہ و دیگر قائدین نے اعلان کیا ہے کہ کُل پاکستان لبیک یا رسول اللہ کانفرنس 20اگست کو ملتوی کر دی گئی ہے۔

اور اب یہ کانفرنس یکم اکتوبر مینارِ پاکستان لاہور میں بعد نمازِ مغرب منعقد ہو گی۔

قائدین نے اعلان کیا کہ تحریک لبیک یا رسول اللہ ﷺ کی عبوری تنظیم سازی چاروں صوبوں اور کشمیر میں کانفرنس سے پہلے مکمل کر لی جائے گی۔ تحریک کے رہنماؤں نے کشمیر کی انتہائی دُکھ دہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ کشمیر کبھی مذاکرات سے آزاد نہیں ہو گا۔ اس کے لئے پاکستان کو قربانی دینی پڑے گی اور کشمیر جہاد کے ذریعے آزاد ہو گا۔ قائدین نے کہا یہ جہاد حکومت اور افواجِ پاکستان کو کرنا ہو گا۔ مختلف دہشت گرد تنظیموں نے پہلے بھی نام نہاد جہاد کے ذریعہ سے دہشت گرد پیدا کیئے ہیں جس سے اسلام اور پاکستان کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ قائدین نے کہا اگر حکومت آزادئ کشمیر کے لئے جہاد کا اعلان کرے تو پوری قوم افواجِ پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑی ہو گی اور دُنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو آزاد ہونے سے نہیں روک سکے گی۔ کشمیر پاکستان کا اٹوٹ انگ ہے اور اس کے لئے پوری قوم سیسہ پلائی دیوار بنتے ہوئے ہر طرح کی قربانی کے لئے تیار ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -