ڈیڑھ کروڑ افراد ہیپا ٹائٹس بی اور سی کا شکار ہو چکے ہیں،افتخار حسین

ڈیڑھ کروڑ افراد ہیپا ٹائٹس بی اور سی کا شکار ہو چکے ہیں،افتخار حسین

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) ہیومن رائٹس ویلفیئر فورم کے صدرافتخارحسین نے کہا ہے کہ وائرل ہیپا ٹائٹس ایک خاموش قاتل ہے پاکستان میں تقریبا ڈیڑھ کروڑ افرادہیپاٹائٹس بی اورسی انفیکشن کا شکارہوچکے ہیں جبکہ صرف ایک فیصد کوعلاج کی سہولت میسرہے ۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے ہیپا ٹائٹس کے عالمی دن کے موقع منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہو ں نے کہا کہ ہیپا ٹائٹس سی کیوجہ سے پاکستان میں جگرکے کینسرکا مرض تیزی سے بڑھ رہا ہے ،کینسرکے سبب ہونے والی اموات میں جگرکے کینسرکا دوسرا نمبرہے ۔انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت ہیپا ٹائٹس جیسے موذی مرض پرقابو پانے میں مکمل طورپرناکام ہوچکا ہے۔

جس کیوجہ سے ملک بھرمیں ہیپا ٹائٹس بی اورسی کا مرض تیزی سے بڑھ رہا ہے لہذا حکومت ہیپا ٹائٹس جیسے خاموش قاتل کیخلاف آگاہی مہم شروع کرے اوروائرل ہیپا ٹائٹس کے مرض کے خاتمے کیلئے حکومت ملک بھرکے تمام سرکاری ہسپتالوں میں ہیپا ٹائٹس کا علاج فری قراردے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -