رائے ونڈ مین بازار میں دکانوں کی بیسمنٹ پانی جمع،عمارتوں کو نقصان پہنچنے کا خدشہ

رائے ونڈ مین بازار میں دکانوں کی بیسمنٹ پانی جمع،عمارتوں کو نقصان پہنچنے کا ...

  

رائے ونڈ (نمائندہ پاکستان)رائے ونڈ مین بازار میں مون سون کے شروع ہوتے ہی اقبال ٹاؤن کی ملکیتی دو دکانوں کی بیسمنٹ کی کھدائی میں کئی کئی فٹ پانی جمع ہونے سے ارد گرد کی عمارتوں کے گرنے کا امکان، کسی بڑے حادثہ کا پیش خیمہ ہیذرائع کے مطابق رائے ونڈ اقبال ٹاؤن کی ملیکتی 156 دکانوں کے ایگریمنٹ میں تحریر ہے کہ دکانوں کے علاوہ بیسمینٹ اور دوسری منزل کا کرایہ علیحدہ ہو گا اورمقررہ مدت تک کوئی نئی تعمیر نہ کرنے کا پابند کیا گیا تھا اِس کے باوجود اقبا ل ٹاؤ ن کی ملیکتی دکان نمبر ز58-57 B کو کرایہ دار نے موجودہ عمارت گرا کر بیسمینٹ اور پلازہ تعمیر کرنے کے لئے کھدائی شروع کروادی انکے دیکھا دیکھی چند گز کے فاصلے پر ایک پرائیویٹ مالک نے بھی اپنی دکان ملحقہ علی ہسپتال گرا کربیسمنٹ کی کھدائی کرواکے پلازہ کی تعمیر شروع کردی بلڈنگ انسپکٹر اقبال ٹاؤن اور چیف افیسر سی او یونٹ رائے ونڈ طیب مقصود نے اس سارے عمل سے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ رائے ونڈ میں تو کوئی بیسمنٹ تعمیر ہی نہیں ہورہی ۔ہل علاقہ کی طرف سے متعلقہ اداروں اور اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کی اپیل ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -