اسلامی کانفرنس نے فتح اللہ گولن کی جماعت کو دہشتگرد قرار دیدیا

اسلامی کانفرنس نے فتح اللہ گولن کی جماعت کو دہشتگرد قرار دیدیا

  

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک ) اسلامی کانفرنس نے فتح اللہ گولن کی جماعت کو دہشت گرد قرار دے دیا ،دوسری جانب ترک وزیر داخلہ نے کہا ہے کہ فتح اللہ گولن کی حوالگی سے متعلق امریکی رویے میں مثبت تبدیلی نظر آ رہی ہے۔نجی نیوز چینل جیو نیوز کے مطابق ترک وزیر داخلہ نے بتا یا کہ وزارت داخلہ میں 300سے زائد اہلکاروں کا گولن سے تعلق تھا جبکہ مزید 2سے 3سفیر بھی فتح اللہ گولن کے ساتھ تعلقات کے شبے میں برطرف کیے جا سکتے ہیں۔دوسری جانب اسلامی تعاون تنظیم نے فتح اللہ گولن کی جماعت کو دہشت گرد قرار دے دیا۔دوسری طرف ترک فوج سے ہزاروں کی تعداد میں اہلکاروں اور افسروں کی برطرفیوں کیخلاف فوج کے دو اعلیٰ ترین جنرل مستعفی ہوگئے ہیں۔سی این این کا ترک ذرائع کے حوالے سے کہنا ہے کہ ترکی میں بحران بڑھتا ہی جا رہا ہے۔ حکومت نے ملک کی خبریں باہر جانے کے خوف سے درجنوں میڈیا ہاوسز پہلے ہی بند کر دیئے ہیں۔ دوسری طرف فوج میں بھی بر طرفیوں کا عمل جاری ہے۔ سینکڑوں افسروں کی برطرفیوں کیخلاف ترک فوج کے دو اعلیٰ جنرل کمال باسگلو اور احسان اویار نے استعفے دے دیئے ہیں۔ دونوں جنرلز کا تعلق بری فوج سے ہے۔

مزید :

علاقائی -