نیب کرپشن میں ملوث حکمرانوں کااحتساب نہیں کرے گا،طاہرالقادری

نیب کرپشن میں ملوث حکمرانوں کااحتساب نہیں کرے گا،طاہرالقادری

  

لاہور(خبر نگار خصوصی)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مظلوموں پر انصاف کے بند راستے کھلیں گے اور ظالموں کے سر نیچے ہونگے۔ کرپشن کی روک تھا م کے قوانین صرف کمزوروں کیلئے ہیں۔قوم اس خوش فہمی سے باہر نکل آئے کہ نیب پانامہ کے چوروں کا احتساب کرے گا ۔نیب سے متعلق سپریم کورٹ کے ججز کے ریمارکس آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہیں نیب کی ڈیڈ لائنوں کا تعلق حکمرانوں کی کرپشن کے کیسز کو ’’ڈیڈ‘‘ کرنے سے ہے ۔دہشتگردی،کرپشن نا انصافی اور نا اہل حکمران پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہیں ۔سانحہ ماڈل ٹاؤن کی بربریت سے لے کر بچوں کے اغوا کی وارداتوں،ادویات کی قیمتوں میں اضافہ تک ظلم کا بازار گرم ہے۔کوئی ادارہ ٹس سے مس نہیں ہو رہا ،گورننس کا ڈھانچہ مفلوج ہو کر رہ گیا۔ہم چپ نہیں رہیں گے ظلم کے اس راج کے خلاف عوام کو متحرک کریں گے ۔31 جولائی کو آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان ہو گا ۔وہ گذشتہ روز پاکستان عوامی تحریک کے سنیئر رہنماؤں اور ونگز کے صدور کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے ۔ڈاکٹر طاہر القادری نے کہاکہ ہماری جدوجہد دہشتگردی کے خاتمہ،حقیقی جمہوریت کے قیام اور انصاف کے بول بالا کیلئے ہے ۔مٹھی بھر خاندانوں نے آئین و قانون،اقتدار اور اداروں کو یرغمال بنا رکھا ہے ۔موجودہ نظام چوروں اور لٹیروں کو تحفظ دے رہا ہے ۔پانامہ لیکس کی تحقیقات کیلئے متفقہ ٹی او آرز کا نہ بننا اس کا کھلا ثبوت ہے یہ پارلیمنٹ بھی حکمرانوں کے سامنے بے بس ہے۔2سال سے 14شہدا کے ورثا جن میں یتیم بچے بھی شامل ہیں سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف کے منتظر ہیں مگر انصاف کا کوئی ادارہ آواز نہیں سن رہا ۔سانحہ ماڈل ٹاؤن کے قاتلوں کو انجام تک پہنچا کر دم لیں گے۔انہوں نے کہاکہ بے گناہوں اور غریبوں کی آہ و بکاہ رائیگاں نہیں جائے گی ۔ڈاکٹر طاہر القادری نے کہاکہ آج 29 جولائی کو ملک بھر سے آنے والے عوامی تحریک کے عہدیدار مشاورتی اجلاس میں شریک ہونگے اور ان سے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے انصاف اور آئندہ کے لائحہ عمل کیلئے مشاورت ہو گی ۔

مزید :

علاقائی -