اینٹی کرپشن نے سب انجینئر رانا مشتاق کیخلاف تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا

اینٹی کرپشن نے سب انجینئر رانا مشتاق کیخلاف تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا

  

لاہور (ارشد محمود گھمن//سپیشل رپورٹر)پنجاب ہائی وے میکنیکل ورکشا پ گلبرگ لاہور کے اکلوتے سب انجینئررانا مشتاق کے خلاف اپنے بھائی کے نام سی کلاس، پاور اینڈڈور انجینئر فرم رجسٹرڈ کروا کر کروڑوں روپے کی غیر قانونی ادائیگیاں کر کے قومی خزانہ کو نقصان پہنچانے پرمحکمہ اینٹی کرپشن نے تحقیقات کا دائرہ کار وسیع کردیا ہے۔ واضح رہے کہ مذکورہ سب انجینئر ،ایس ڈ ی او، ایکسین نے ٹھکیداروں سے مبینہ ملی بھگت کر کے سپلائی میں غبن،سپلائی انڈر گیج اور انڈر سائز مال مصری شاہ بازار(کباڑ) سے لینا اورٹینڈرز میں خورد برد کرنااس کے وتیرے میں شامل ہے، اسے کرپشن کی وجہ سے معطل بھی کیا گیاتھا مگر اثراسوخ کے بل بوتے پر آج بھی تعینات ہے اور کروڑوں کے اثاثوں کو مالک بن گیا ہے ۔ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ پنجاب ہائی وے میکنیکل ورکشاپ گلبرگ لاہور میں تعینات اکلوتا سب انجینئر رانا مشتاق جس کی کرپشن اور قومی خزانہ کو مبینہ طور پر کروڑوں روپے کا چونا لگانے کے حوا لے سے داستان کے قصے زبان زدعام ہیں نے اپنے اعلی افسران کے ساتھ مبینہ طور پر ملی بھگت کر کے ایک فرم پاور اینڈ ڈور انجینئرکے نام سے غیر قانونی طریقہ سے اپنے بھائی شہر یارکے نام سے رجسٹرڈ کروائی جو پانچ کروڑ روپے مالیت کی حثیت رکھتی ہے کو اعلی افسران کے ساتھ مل کر اس کے نام ٹینڈرز کروا کر بغیر کام کئے کروڑوں روپے کے بلز ڈال کر ادائیگیا ں کر کے قیمتی اثاثوں کے مالک بن گئے ذرائع نے بتایا کہ حکومت کی طرف سے عوام کی سہولیات کے لیے لاہور اور دیگر شہروں میں لوہے کے اسٹیل برج بنائے گئے جس میں بھی ناقص مٹیریل کا استعمال اور پرانے اتارے جانے والے اسٹیل برج کا سامان لگا کر کروڑوں روپے کی کرپشن کی گئی ہے ،ذرائع نے مزید بتایا کہ مذکورہ سب انجینئر اپنے من پسندٹھیکیداروں یسین وغیرہ سے بھی ساز باز کر کے قومی خزانے کو نقصان پہنچا چکے ہیںیہاں تک کہ اس نے سپلائی میں غبن،سپلائی انڈرگیج اور انڈر سائز مال مصری شاہ بازار ( کباڑ ) سے لے کر،بورڈ سائن بورڈ،گینتریاں لوہے کی کٹ پیس سے بنا کر،ٹینڈرز میں خورد برد کیاہے رانا مشتاق سب انجینئر نے ہر ٹینڈر میں اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کر کے قومی خزانہ سے غیر قانونی طور پر کروڑوں کی ادائیگیاں کروا لیں ،ذرائع کے مطابق اس کی کرپشن کی وجہ سے اسے 2012میں معطل کر دیا گیا بعد ازاں اس نے اثر اسوخ رکھتے ہوے اپنی بحالی کروا لی اور کرپشن کو ا اپنا وتیرہ بنا لیاجس کی وجہ سے آجکل کوٹھی بنگلہ،گاڑیاں اور قیمتی پلاٹوں کا مالک بن گیا ہے اینٹی کرپشن میں اس کے خلاف بے شمار انکوائریوں کو ردی کی ٹوکری کی زینت بنا دیا گیا جس کو دوبارہ ڈی جی اینٹی کرپشن مظفرحسین رانجھا نے عوامی حلقوں کی درخواست پر پنجاب ہائی وے میکنیکل ورکشاپ گلبرگ لاہور کے سب انجینئر رانا مشتاق سمیت تمام ذمہ دران افسران کے خلاف انکوائری کو ا ری اوپن کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں۔

مزید :

علاقائی -