پنجاب میں خواتین بچے محفوظ نہیں رہے، میاں محمود الر شید

پنجاب میں خواتین بچے محفوظ نہیں رہے، میاں محمود الر شید

  

لاہور ( نمائندہ خصوصی ) پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمود الر شید نے کہا کہ پنجاب میں خواتین بچے محفوظ نہیں رہے،صوبے میں6ماہ کے دوران652بچوں کا اغوا ء، ایک سال میں744خواتین قتل ہو گئیں، سرکاری ملازمین، ڈاکٹر، پیرا میڈیکل سٹاف،کسان، طلبہ اساتذہ ہر طبقہ سڑکوں پر سراپا احتجاج ہے، پولیس کو سیاسی بنا دیا گیا ہے، سندھ سے زیادہ پنجاب میں وزیر اعلیٰ کوتبدیل کرنیکی ضرورت ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز میلسی میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ قائد حزب اختلاف نے کہا کہ صوبے میں رکن صوبائی اسمبلی محفوظ نہیں تو عام آدمی کا کیا حال ہوگا، انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے ایم پی اے جہانزیب خان کچھی پر فائرنگ اور لیگی عہدیدار پر مقدمہ درج کرنے پر ڈی پی اور اوکاڑہ اور مقامی ایس ایچ او کی معطلی کی مذمت کرتے ہیں۔

محمود الر شید

مزید :

علاقائی -