حالیہ بارش سے جنوبی پنجاب میں موسم خوشگوار، جگہ جگہ کھڑا پانی شہریوں کیلئے درد سر بن گیا

حالیہ بارش سے جنوبی پنجاب میں موسم خوشگوار، جگہ جگہ کھڑا پانی شہریوں کیلئے ...

  

ملتان،خانیوال،میانچوں،میلسی ،مظفرگڑھ،کوٹ ادو،میر ہزار خان،سیت پور،شادن لُنڈ،صادق آباد،لیاقت پور(خبرنگار،نمائندگان)ملتان اور گردوں میں بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب بارش کے بعد گزشتہ روز بھی بادل چھائے(بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

رہے اور گرمی کی شدت میں کمی واقع ہوئی اور ملتان میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت35.2ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ حالیہ بارش کے بعد نہ صرف ملتان بلکہ جنوبی پنجاب کے تمام شہروں میں گرمی کی شدت میں کمی واقع ہوئی ہے ڈی خان میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت36.7،بہاولپور میں37.9،رحیم یار خان میں38.3،خانپور میں36.6،بہاولنگر میں37 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا واضع رہے کہ ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے تمام علاقے پچھلے کئی روز سے شدید گرمی اور حبس کی لپیٹ میں تھے۔مقامی محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بھی مطع ابر آلود رہنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش ہونے کا امکان ہے۔خانیوال سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق ہلکی سی بارش کا پانی پرانا لاری اڈا ،بلالی مسجد روڈ ،ریلوے روڈ ،چوک جسونت نگر روڈ ،مدینہ ٹاؤن ،ضلع کچہری ،کچہری بازار ،رحمن ٹاؤن، کوٹ محمد حسین ،بستی کھوکھرآباد ودیگرعلاقوں میں سیوریج پائپ لائنوں کی صفائی نہ ہونے سے بارش کے پانی کی نکاسی نہ ہوسکی ،کئی گھنٹوں پانی گلیوں ،چوکوں اور روڈوں پر تالاب کا منظر پیش کرتا رہا ۔راہگیروں کیلئے روڈوں پرکھڑے پانی سے گزرنا محال ہوگیا سماجی عوامی وتاجر حلقوں نے حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔میاں چنوں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ریلوے انڈر پاس کے نیچے بارش کا پانی جمع ہونے سے عوام کا گذرنا محال ہو چکا ہے ،ٹی ایم اے انتظامیہ افسران کی روائتی بے حسی اور عوامی نمائندوں کی عدم تو جہی کی وجہ سے ریلوے انڈر پاس کے نیچے سے پانی نکالنے والی موٹر کئی سالوں سے خراب ہے لیکن کسی کے کا نوں پر جوں تک نہیں رینگی نہ تو موٹر لگوائی جارہی ہے اور نہ ہی کئی روز تک بارش کا پانی نکالا جاتا ہے ،عوامی سماجی حلقوں ڈی سی او خا نیوال اور عوامی نمائندوں سے شہریوں کے حال پر رحم کھانے کا مطالبہ کیا ۔میلسی سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ شب میلسی اور گردو نواح تیز ہوا کے ساتھ موسلادھار بارش سے گرمی کی شدت میں کافی حد تک کمی واقع ہو گئی۔ مترو اور قریبی علاقوں میں آندھی سے فصلوں اور بل بورڈز بھی نقصان پہنچا۔جبکہ کہ شہر کی کچھ نشیبی علاقے سیوریج سسٹم بند ہونے سے زیر آب بھی آگئے ۔ اور بجلی کا نظام بھی متاثر ہوا۔ جمعرات کو دوپہر پھر سے حبس میں شدید اضافہ سے لوگ پسینے میں شرابور نظر آتے رہے۔ مظفرگڑھ سے نامہ نگار کے مطابق مظفرگڑھ خان گڑھ اور گردونواح میں گزشتہ رات شدید بارش آئی جو کہ ساون کی پہلی بارش تھی ۔موسلادحار بارش سے علا قے جل تھل ہو گئے اور نشیبی علاقوں میں کئی کئی فٹ پانی ٹھہر گیا جبکہ ٹی ایم اے مظفر گڑھ اور بلدیہ خان گڑھ کے بارش سے نمٹنے کے دعوے بوگس نکلے جس پر شہریوں رانا عبدالاحد فرزند،رانا سہیل فرزند ،رانا تنویر امجد ،رانا شمشاد ،رانا شاہد ،رانا تیمور،رانا حسن وکیل ا ور دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے ٹی ایم اے حکام سے نکاسی آب کا مطالبہ کیا ۔میر ہزار خان سے نامہ نگار کے مطابق میرہزار خان میں آندھی اور تیز بارش بارش سے موسم تو خوشگوار ہو گیا لیکن گلیاں اور بازا ر بارش کے پانی سے بھر گئے لوگوں کے لئے آنا جانا دشوار ہو گیا ۔بارش کے پانی میں نالیوں کا گندہ پانی بھی شامل ہو گیا جس سے تعفن پھیل گیا ۔ بجلی کا نظام بھی مفلوج ہو گیا ۔گزشتہ بیس گھنٹوں سے میرہزار خان اور گردونوا ح میں بجلی بند ہونے سے لوگوں کے مسائل میں مذید اضافہ کر دیا ۔کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق سیت پور اور گردو نواح میں موسلادھار بارش ہوئی جو ایک گھنٹہ پندرہ منٹ جاری رہی بارش سے کچے مکانات کی چھتیں ٹپک پڑیں جبکہ نشیبی علاقے بارش کے پانی سے بھر گئے شہر میں صفائی کے ناقص انتظام کی وجہ سے تعفن پھیل گیا ہے جس سے بیماریاں پھوٹنے کا خطرہ بڑھ گیا ہے جبکہ واپڈا اہلکاروں نے بارش کے بعد سے بجلی بند کی ہوئی ہے جسے اب چوبیس گھنٹے گزر گئے ہیں جس کی وجہ سے شہریوں کی پریشانی میں اضافہ ہوگیا ۔شادن لُنڈ سے نامہ نگار کے مطابق شادن لُنڈ اور گر دو نوا ح کے علا قو ں میں کا فی عر صہ سے با را ن رحمت نہ ہو نے سے گر می اور حبس کی وجہ سے شہر ی پریشا ن تھے اور مسا جد میں با رش کے لئے دعا ئیں ما نگی گئیں چنا نچہ گذ شتہ را ت تیز آ ندھی کے بعد سا ون کی پہلی با رش نے جل تھل مچا دی جس سے مر جھا ئے ہو ئے چہر ے کھل اُ ٹھے ۔با رش سے کپا س اور گنا کی فصل پر اچھے اثرا ت مر تب ہو نگے۔صادق آباد سے تحصیل رپورٹر کے مطابق صادق آبادکے نواحی علاقہ ولہار میں گذشتہ سے پیوستہ روز تیز ہوا کے ساتھ ہونے والی بارش کے باعث سینکڑوں گھروں کو بجلی فراہم کرنے والا ٹرانسفارمر کھمبوں سمیت زمین بوس ہوگیا ہے جس کی وجہ سے بجلی کی تاریں بھی زمین پر پڑی ہیں جبکہ پورے علاقہ کی بجلی بند ہونے سے مکینوں کوشدید پریشانی کا سامنا ہے واپڈا حکام کی جانب سے اڑتالیس گھنٹے گزر جانے کے باوجود بجلی کی بحالی کیلئے کوئی کام نہیں شروع کیا گیا ‘ اہلیان علاقہ غلام مجتبی‘ غلام مرتضی‘محمد شاہد اور دیگر نے واپڈا حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ولہار کی بجلی جلد از جلد بحال کی جائے دریں اثناء گزشتہ رات موسم گرما کی پہلی بارش تیز ہواؤں کیساتھ ہوئی ، جس سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا اور موسم خوشگوار ہوا موسلا دھار بارش کی وجہ سے نشیبی علاقوں میں بارش کا پانی جمع ہو گیا جبکہ شہر کی متعد د سٹرکیں بھی بارش کے پانی میں ڈوب گئی ہیں ایک عرصے بعد بارش ہونے سے شہریوں کے چہرے خوشی سے کھل اٹھے۔لیاقت پور سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ شب ہلکی بارش سے موسم خوش گوارہوگیا،فصلوں پر بھی مثبت اثرارت مرتب ،تفصیل کے مطابق شدید تر ین گرمی کے بعد گزشتہ شب فیروزہ گردونواح چولستان عباسیہ میں ہلکی بارش کے بعد موسم خوش گوار ہو گیا ہے ،اور گرمی کا بھی ذور ٹوٹ گیا ہے ،جبکہ حالیہ بارش سے فصلوں پر بھی مثبت اثرات مرتب ہورہے ہیں ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -