مردان یونیورسٹی کے سپر نٹنڈنٹ کو نیب نے گرفتار کرلیا

مردان یونیورسٹی کے سپر نٹنڈنٹ کو نیب نے گرفتار کرلیا

  

پشاور( پاکستان نیوز)قومی احتساب بیورو خیبرپختونخوانے عبدالولی خان یونیورسٹی کے سابق سپرنٹنڈنٹ(BPS-17) اور موجودہ مردان یونیورسٹی میں سپرنٹنڈنٹ کی اسامی پرخدمات انجام دینے والا زاہد محمود کوگرفتارکرلیاہے۔مبینہ طورپرملزم زاہدمحموداپنے دیگرساتھیوں کی ملی بھگت سے بدعنوانی میں ملوث تھاعلاوہ ازیں ملزم نے اپنے اختیارات کاناجائز استعمال کرتے ہوئے عبدالولی خان یونیورسٹی میں 652اہلکاروں کوغیرقانونی طریقے سے بھرتی اورمستقبل کیاتھا۔تفصیلات کے مطابق سپرنٹنڈنٹ زاہدمحمودعبدالولی خان یونیورسٹی میں مذکورہ اسامی پر2009سے 2012تک خدمات انجام دے چکاہے تاہم دوران ملازمت انہوں اپنے ساتھیوں کی ملی بھگت سے652افرادکی غیرقانونی طریقے سے بھرتی اورکنٹریکٹ اہلکاروں کی مستقلی کیلئے صوبائی حکومت کی 2005میں جاری کردہ نوٹیفکیشن کی غلط تشریح کرتے ہوئے سمری تیارکی تھی۔ملزم کی جسمانی ریمانڈحاصل کرنے کیلئے جلداسے احتساب عدالت کے سامنے پیش کیا جائیگا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -