سیلابی نقصانات سے بچنے کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے جائیں ، سکندر شیر پاؤ

سیلابی نقصانات سے بچنے کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے جائیں ، سکندر شیر پاؤ

  

 پشاور( پاکستان نیوز)سینئر وزیربرائے آبپاشی سکندرحیات خان شیرپاؤ نے عالمی موسمیاتی تبدیلی اوراس سال مون سون میں پہلے سے زیادہ بارشوں کی پیشن گوئی کے پیش نظرمحکمہ آبپاشی کو خصوصی ودیگر متعلقہ محکمہ جات کو عمومی طورپر ممکنہ سیلابی نقصانات سے بچاؤ کیلئے ضروری ہدایات جاری کی ہیں۔ انہوں نے محکمہ موسمیات پشاورسے کہاہے کہ وہ بارشوں سے متعلق معلومات ایریگیشن کے متعلقہ دفتر کوتین چارروز قبل دیا کرے تاکہ عوم الناس کوممکنہ سیلابی خطرات سے بچنے کے لئے معلومات بروقت جاری ہوں اورانہیں ممکنہ نقصانات سے بچایاجاسکے ۔انہوں نے مزیدکہا کہ اس سلسلے میں محکمہ موسمیات اورمحکمہ آبپاشی باہمی طورپر ہفتہ وار اجلاسوں کاسلسلہ شروع کریں تاکہ متوقع بارشوں کے بارے میں مکمل آگاہی حاصل ہوسکے۔ انہوں نے ایریگیشن کے عملہ کو بھی ہدایت کی کہ متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کے ساتھ مکمل تعاون کریں تاکہ سیلاب کے نقصانات سے بروقت نمٹاجاسکے اور لوگوں کی جان ومال کو بچایا جاسکے ۔اس مقصد کیلئے سرکاری تعطیلات کے دوران محکمہ آبپاشی کے افسران اپنے دفاتر میں موجود ہیں اورہنگامی صورتحال سے حکام بالاکو ان کے موبائل فون پرمطلع کریں اس کے لئے صوبائی وزیر آبپاشی کو 0333-5117702 ،سیکرٹری ایریگیشن کو0345-5030306 ،پرنسل سیکرٹری ٹو وزیراعلیٰ0345-3228222 ،ڈائریکٹر جنرل پی ڈی ایم اے0346-9072848 ،چیف انجینئر(ساؤتھ) 0333-9055123 ،چیف انجینئر(نارتھ)0333-9101017 ،پی ایس او برائے چیف سیکرٹری کو0300-8554655 پراطلاع دی جائے۔ صوبائی سینئر وزیر سکندرحیات شیرپاؤ نے تاکید کی کہ مون سون کے دوران ریجنل اورڈویژنل فلڈ ایمرجنسی سیل میں سٹاف کی حاضری کویقینی بنایا جائے اورمحکمہ کے افسران بالاوقتاًفوقتاً اس کی نگرانی کریں اور غیر حاضر سٹاف کے خلاف تادیبی کاروائی کی جائے ۔نیز آبی گزرگاہوں میں غیر قانونی قبضہ جات یاسیلاب کی زدمیں آنے والی آبادی کی نشان دہی کی جائے اورمتعلقہ ڈسٹرکٹ انتظامیہ کے تعاون سے تجاوزات ہٹانے کے لئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -