چارسدہ کے تاریخی قبر ستان میں غاصب قبضہ مافیا کے خلاف انتظامیہ کی سر د مہری سوالیہ نشان

چارسدہ کے تاریخی قبر ستان میں غاصب قبضہ مافیا کے خلاف انتظامیہ کی سر د مہری ...

  

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ کے تاریخی قبر ستان میں غاصب قبضہ مافیا کے خلاف انتظامیہ کی سر د مہری سوالیہ نشان ہے۔ تاجر اتحاد نام و نہاد تاجرتنظیم کے خود ساختہ رہنماء قبر ستانوں پر قبضہ کیلئے محکمہ اوقاف کے کارندوں سے مل کر قومی املاک کو شیر مادر نہ سمجھے ۔ مولانا صلاح الدین شاکر ۔ تفصیلات کے مطابق تاجر اتحاد چارسدہ کا ہنگامی اجلاس زیر صدارت مرکزی صدر مولانا صلاح الدین شاکر منعقد ہوا۔ اجلاس میں جنرل سیکرٹری افتخار حسین ، پریس سیکرٹری حبیب ، میاں مفرق شاہ ، ضیاء الدین ، جہانزیب زرگر، ارشاد علی ، محمد ناصر ، شیر محمد ، مسلم ، عبید اللہ باچہ ، آصف ، ساجد ، عاطف جان کے علاوہ تنگی روڈ کے تاجروں نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔ اجلاس میں تنگی روڈ پر قبر ستان میں ناجائز قبضے کے تحت غیر قانونی طور پر دوکانات کی تعمیر کی شدید مذمت کی گئی اور کہا کہ نام و نہاد تاجر رہنماء ٹاؤٹ بن کر محکمہ اوقاف کے ملازم گوہر کے ملی بھگت سے وقف شدہ اور قومی ملکیت چارسدہ کے تاریخی قبر ستان پر قبضہ جمار ہے ہیں ۔ اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے تاجر اتحاد کے مرکزی صدر مولانا صلاح الدین اور دیگر نے کہا کہ قبر ستان پر قبضہ اور دکانات کی تعمیر کے خلاف تاجر اتحاد چیف سیکرٹری اور محکمہ اوقاف کے وزیر کے دفتر کے سامنے احتجاجی کیمپ لگا کر مظاہرے کرینگے جس کی تمام تر ذمہ داری محکمہ اوقات اور ضلعی انتظامیہ پر ہو گی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -