واپڈاٹاؤن سکینڈل، مزید 2ملزم گرفتار، سابق چیف ایگزیکٹو میپکو کی مبینہ گرفتار و رہائی

واپڈاٹاؤن سکینڈل، مزید 2ملزم گرفتار، سابق چیف ایگزیکٹو میپکو کی مبینہ ...

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)نیب ملتان بیورو نے گزشتہ روز واپڈا ٹاؤن سکینڈل میں مزید2بااثر ملزمان کو مبینہ طور پر گرفتار لیا ہے۔ان ملزمان میں کنونئیر پرچیز کمیٹی انجینئر ضیاء الرحمان اور ضلعی جنرل سیکرٹری مسلم لیگ(ن) شیخ اطہر ممتاز کا بھائی کاشف ممتاز بھی شامل ہے۔کاشف ممتاز بنیادی طور پر پرچیز کمیٹی کا ممبر بھی ہے۔بتایا جاتا ہے نیب ملتان کی جانب سے گزشتہ روز ایم سی کمیٹی کے ممبران کو انکوائری آفیسر نے بیان ریکارڈ کرانے کیلئے طلب کیا۔اس موقع پر سابق چیف ایگزیکٹو میپکو مظفر علی عباسی کو بھی واپڈا ٹاؤن سکینڈل کے سلسلے میں طلب کیا گیا تھا۔سابق سی ای او نے بھی گزشتہ روز اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔اس موقع پر نیب ملتان بیورو نے کنونئیر پرچیز کمیٹی انجینئر ضیاء الرحمن اور ممبر کاشف ممتاز کو گرفتار کرلیا۔معلوم ہوا ہے ان دونوں ملزمان نے اراضی پرچیز کے سلسلے میں سامنے آنے والی بے قاعدگیوں کونہ صرف نظرانداز کیا بلکہ دونوں ملزمان نے اپنے اپنے فرنٹ مین کے ذریعہ واپڈا ٹاؤن میں پلاٹوں کی خرید و فروخت کا بزنس شروع کردیا جس کیوجہ سے اربوں روپے مالیت کا سکینڈل سامنے آیا ہے۔بتایا گیاہے کہ گزشتہ روز ان دونوں ملزمان کی گرفتاری کے ساتھ سابق سی ای او میپکو مظفرعلی عباسی کو بھی نیب نے مبینہ طور پر حراست میں لے لیا لیکن رات گئے یہ افواہیں سرگرم رہیں کہ مظفرعلی عباسی کو رہا کردیا گیا ہے۔جس پر مذکورہ ملزمان کے بااثر ساتھی حرکت میں آگئے نیب حکام پر ان ملزمان کو گرفتار نہ کرنے پر زور دیا ۔جس پر نیب حکام نے رات گئے تک نہ صرف واپڈا ٹاؤن سکینڈل میں کسی ملزم کی گرفتاری سے انکار کیا بلکہ نیب ترجمان نے اپنا موبائل نمبر بھی بند کردیا اور واٹس اپ نمبر بھی جواب نہ دیا۔

مزید :

ملتان صفحہ اول -