ریونیوڈیپارٹمنٹ لاہور میں مبینہ مالی کرپشن، نیب نے ملزم کو گرفتار کرلیا

      ریونیوڈیپارٹمنٹ لاہور میں مبینہ مالی کرپشن، نیب نے ملزم کو گرفتار ...

  

لاہور(نامہ نگار) احتساب عدالت نے ریونیو ڈیپارٹمنٹ لاہور میں مبینہ کروڑوں روپے کی مالی کرپشن کے الزام میں گرفتار ملزم رفاقت علی کو 4 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرنے کا حکم دیدیا عدالت نے دلائل سننے کے بعد ملزم کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کیاتھا جو بعد میں سنا دیاگیا احتساب عدالت نمبر 4 کے جج سجاد احمد نے کیس پر سماعت کی نیب کے پراسیکیوٹر حافظ اسد اللہ اور تفتیشی افسر رائے وقاص عدالت میں پیش ہوئے فاضل جج کے استفسار پر نیب کے پراسیکیوٹر نے بتایا کہ جائیدادیں ملزم کے نام پر نہیں اس کے ماموں کے نام پر جائیداد ہے جس پر فاضل جج نے کہا کہ آپ نے چوہے کو پکڑ لیا ہے جو اصل ملزم ہے اس کو گرفتار ہی نہیں کیا تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ پٹواری سمیت دیگر ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوچکے ہیں فاضل جج نے تفتیشی افسر پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آئی او صاحب ایسے نہیں چلے گا ایسے نہیں ہوگا کوئی ثبوت پیش کریں ورنہ مشکل ہوگا سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ ملزم پر جرم ثابت ہونے سے پہلے گرفتار کرلیا جاتا ہے نیب کے تفتیشی نے کہا کہ ملزم کے بینک اکاؤنٹ میں 50 لاکھ روپے ہیں جس پر فاضل جج نے کہا کہ ملزم کا اگر تعلق نہ ظاہر ہوا تو ملزم کو رہا کرنے کا حکم دیدیاجائیگا نیب کے پراسیکیوٹر نے کہا کہ نیب نے ریونیو ڈیپارٹمنٹ لاہور میں مبینہ مالی کرپشن پر ملزم کو گرفتار کیا ہے لینڈ ریکارڈ میں ردو بدل کرتے ہوئے کروڑوں روپے بٹورنے کے الزام میں ملزم رفاقت علی کو گرفتار کیاگیا ملزم رفاقت علی محکمہ ریونیو کے اہلکار جمیل احمد کا بیٹا جبکہ کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث پایا گیا ہے ملزم رفاقت علی نے ریونیو حکام کی مبینہ ملی بھگت سے موضع سادھوکی اور ماڈل ٹاؤن کے علاقہ میں اربوں روپے مالیت کی سینکڑوں کنال زمین شریک ملزمان کے نام منتقل کروائی ملزم رفاقت علی نے 2002ء سے 2008ء کے دوران 850 کنال سے زائد زمین من پسند افراد کو منتقل کی ملزمان نے آپس کی ملی بھگت سے 83 کنال زمین غیرقانونی طور پر ڈی ایچ اے رہبر کو فروخت کی ریونیو حکام کی ملی بھگت سے پنجاب کوآپریٹو بینک کی 135 کنال زمین بھی ملزمان نے ملی بھگت سے فروخت کی غیرقانونی طور پر حاصل رقوم سے ملزم رفاقت علی نے اپنے اور اہل خانہ کے نام کروڑوں روپے کی جائیدادیں بنائیں جن کے شواہد حاصل کرلئے گئے ہیں دوران تحقیقات ملزم سے مالی غبن اور شریک ملزمان کے حوالے سے اہم انکشافات کی امید ہے عدالت سے استدعا ہے کہ ملزم کو جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیاجائے عدالت نے نیب کی جسمانی ریمانڈ کی استدعا پر دلائل سننے کے بعد کچھ دیر تک فیصلہ محفوظ کرلیا تاہم بعدازاں فاضل جج نے فیصلہ سناتے ہوئے ملزم کو جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید :

علاقائی -