سستے گھروں کی اہمیت مسلمہ، روزگار کے مواقع پیداہوں گے، عبدالکریم

سستے گھروں کی اہمیت مسلمہ، روزگار کے مواقع پیداہوں گے، عبدالکریم

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے صنعت و تجارت عبد الکریم نے صوبے میں سستے گھروں کی تعمیر کی اہمیت پر زور دیا ہے جس کی بدولت صوبہ میں روزگار کے مواقع پیدا ہونگے ان خیالات کا اظہار معاون حصوصی کی زیر صدارت آج خیبرپختونخوا بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ میں اجلاس کے موقع پر کہی، اجلاس وزیر اعظم کے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروجیکٹ میں رہائشیوں اور بنیادی ڈھانچے کے ترقیاتی کاموں کے لئے سرکاری نجی شراکت (پی پی پی) کے انتظامات میں دلچسپی رکھنے والے ممکنہ بلڈروں اور ڈویلپرز کی شمولیت کے بارے میں تبادلہ خیال کرنے کے لئے منعقد ہوا۔خیبر پختونخوا کے اعلی ممکنہ بلڈرز اور ڈویلپرز نے خیبر پختونخوا کی حکومت کے متعلقہ محکموں کے ساتھ شرکت کی اور نیا پاکستان ہاؤسنگ پروجیکٹ کے تحت وفاقی حکومت کی طرف سے دی جانے والے مراعات کی روشنی میں مختلف طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔اجلاس معاون خصوصی برائے صنعت و تجارت کے افتتاحی کلمات سے شروع ہوا اجلاس کے حوالے سے حسن دوٗاد بٹ چیف ایگزیکٹیو افیسر خیبرپختونخوا بورڈ اف انویسٹمنٹ نے تفصیل سے شرکاہ کو اگاہ کیا۔جنرل عامر، ڈپٹی چیئرمین، نیا پاکستان ہاؤسنگ اینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (NAPHDA) نے اس منصوبے کی تفصیلی بریفنگ دی.انہوں نے نیا حکومت ہاؤسنگ پروجیکٹ پر عملدرآمد کے لئے بلڈرز / ڈویلپرز کو پاکستان حکومت کی طرف سے دی گئی مراعات کے بارے میں بھی بتایا۔بریفنگ کے اختتام پر، نجی بلڈروں اور ڈویلپرز نے اس منصوبے کے بارے میں سوالات پوچھے جن کے جوابات ڈپٹی چیئرمین، این پی ایچ پی نے تفصیل سے دئیے۔آخر میں معاون خصوصی برائے صنعت و تجارت عبدالکریم نے اس طرح کے اجلاس کے انتظامات پر خیبرپختونخوا بورڈ اف انویسٹمنٹ کی تعریف کی جس میں خیبر پختونخوا کے متعلقہ محکموں اور این پی ایچ پی اور ڈویلپرز / بلڈرز نے شرکت کی.انہوں نے یہ بھی اعتراف کیا کہ وزیر اعظم عمران خان کے اس اقدام میں نجی شعبے کے ڈویلپرز / بلڈروں کو شامل کرنے کے لئے خیبر پختونخوا ایک پیش گو صوبہ ہے۔ڈپٹی چیئرمین، میجر جنرل عامر نے بھی کے پی بی او آئی ٹی کے اس اقدام کی تعریف کی اور کہا کہ یہ کسی بھی صوبے کی طرف سے این پی ایچ پی کے لئے اہتمام کیا جانے والا پہلا اجلاس ہے.سیشن کے اختتام پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ نجی بلڈروں / ڈویلپرز کی ایک ٹیم مزید تفصیلی گفتگو کے لئے چیئرمین این پی ایچ پی سے ملاقات کے لئے این پی ایچ پی کا دورہ کرے گی اور کے پی بی او آئی ٹی اس ملاقات میں سہولت فراہم کرے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -