ٹانک، جنوبی وزیرستان کے آپریشن راہ نجات کے متاثرین کا احتجاجی مظاہرہ

ٹانک، جنوبی وزیرستان کے آپریشن راہ نجات کے متاثرین کا احتجاجی مظاہرہ

  

ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان تحصیل تیارزہ سے تعلق رکھنے والے اور اپریشن راہ نجات سے متاثرہ محسود قبائل کا وانا میں اپنے مطالبات بارے احتجاجی مظاہرہ، مظاہرے کی قیادت کرنے والے مولانا عبداللہ محسود،صدر حسن محسود،ملک روزی خان اورسماجی کارکن فیض اللہ کررہے تھے مظاہرے سے مقرین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ منتخب ایم این اے علی وزیر،ایم پی اے نصیر اللہ وزیر اور ضلعی انتظامیہ جنوبی وزیرستان نے اے آئی پی اور اے ڈی پی کی ترقیاتی سکیموں میں ہمارے حقوق پر ڈاکہ ڈال کر تحصیل تیارزہ کومکمل طور پر نظر انداز کردیا ہے اور پچھلے کئی دہائیوں سے متواتر منتخب نمائندے و ضلعی انتظامیہ ابتک کسی قسم کے ترقیاتی کام نہیں کئے ہیں جس سے تحصیل تیارزہ کی محرومی دن بدن بڑھتی جارہی ہے۔انہو ں نے کہا کہ اپریشن راہ نجات کے دوران ہمارے گھر مسمار،صحت وتعلیم بری طرح متاثر ہوگئے مسمار شدہ گھروں کے نقصانات کا ازالہ کرے جبکہ منتخب نمائندے اورضلعی انتظامیہ تحصیل تیارزہ میں خستہ حال سڑکوں کی مرمت کرنا اور نئی سڑکیں تعمیرکرنا،دور افتادہ علاقوں میں ازسر نو سکولوں کی تعمیرکرنا اور خراب سکولوں کی ریپرنگ کرنے اور نئی صحتی مراکز قائم کرنااوربدحال ہسپتالوں کی ازسرنوفعال بنانے کیلئے اقدامات اٹھانے چاہئے موبائل نیٹ ورک بحال کرنے کے ساتھ ساتھ 3Gاور4Gکوفوری طور پر چالو کیاجائے اس کے علاوہ زرعی زمینوں کو سیلابی ریلوں سے بچاؤ کیلئے پروٹیکشن بند اور چینل کی تعمیر یقینی بنایا جائے،پینے کے صاف پانی کیلئے واٹر سپلائی سکیمز لگانے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائیں۔تاکہ ہماری محرومیوں کا ازالہ ہوسکے۔انہوں نے دھمی دیتے ہوئے کہا کہ اگر منتخب قومی وصوبائی اسمبلی کے نمائندے اور ضلعی انتطامیہ نے ہمارے جائز مسائل حل نہ کئے تو دو ہفتوں کے بعد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری کردینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -