بھارت کا مقبوضہ کشمیر میں نئی صنعتوں کیلئے 9600کنال سے زائد اراضی پر قبضہ

بھارت کا مقبوضہ کشمیر میں نئی صنعتوں کیلئے 9600کنال سے زائد اراضی پر قبضہ

  

سری نگر،(آن لائن)مودی کی زیرقیادت بھارت کی فاشسٹ حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں اسرائیل طرز پر 37 نئی صنعتی اسٹیٹس بنانے کے نام پر 9600 کنال سے زیادہ اراضی پر قبضہ کرلیا ہے۔ ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد پر مشتمل سول سوسائٹی کی تنظیم جموں و کشمیر رائٹ ٹو انفارمیشن موومنٹ کی طرف سے اس اقدام کی شدید مذمت کی ہے۔ آر ٹی آئی موومنٹ نے سری نگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ یہ ایکشن زراعت پر مبنی کشمیر کی معیشت کے لئے تباہ کن ثابت ہوگا۔آر ٹی آئی موومنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر راجہ مظفر بٹ نے کہا کہ جموں و کشمیر میں ہمارے پاس درجنوں صنعتی اسٹیٹ ہیں بغیر کسی بنیادی ڈھانچے کے اور اس طرح کے مزید اسٹیٹ بنانے کے لئے بہت بڑی اراضی کا حصول مکمل طور پر غیر دانشمندانہ فیصلہ ہے۔

اراضی پر قبضہ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -