شبقدر، بنوں، بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر عوام کا شیدید احتجاج، ٹریفک معطل

  شبقدر، بنوں، بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر عوام کا شیدید احتجاج، ٹریفک ...

  

شبقدر (نمائندہ خصوصی شبقدر میں بجلی کے ناروا لوڈشڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرو ں کے دوران مظاہرین نے شبقدر اور قبائیلی ضلع مہمند سڑک ہر قسم ٹریفک کیلئے بند کردی۔ ٹریفک بندش سے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑا۔ شبقدر میں حلیم زئی اور میچنی بجلی فیڈروں پر گذشتہ ایک ہفتہ سے بجلی لوڈشڈنگ اور بجلی کی مسلسل بندش کے خلاف علاقہ عوام سراپا احتجاج بن گئے۔ حلیم زئی بجلی فیڈر پر بجلی لوڈشڈنگ اور بجلی سپلائی کی معطلی کے حلاف علاقہ عوام نے احتجاجا شبقدر اور قبائیلی ضلع مہمند کو جانے والی سڑک کو ہر قسم کے ٹریفک کیلئے بند کردی تھی۔ احتجاجی مظاہرین رحمت علی مہمند، ملک نوید خان اور دیگر نے کہا کہ حلیم زئی بجلی فیڈر پر واپڈا اہلکاروں نے غیر قانونی بجلی منقطع کرنے کا سلالہ جاری رکھا ہوا ہے انہوں نے کہا کہ شبقدر گریڈ سٹشن میں مقامی اہلکار لائن کاٹ کر فیڈر پر صارفین کو بجلی سے محروم کر دیتے ہیں۔ انہوں کہاکہ شڈول لوڈشڈنگ کے علاوہ بھی مقامی واپڈا اہلکار مقامی سطح پر منقطع کر دیتے ہیں جس سے علاقہ عوام کو بجلی لوڈشڈنگ سے سخت مشکلات کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر واپڈا اہلکاروں حلیم زئی فیڈر پر لوڈشڈنگ کے دورانیہ میں کمی اور مقامی سطح بجلی کو منقطع کرنے کا سلسلہ بند نہ کیا تو حلیم زئی فیڈر کے صارفین اپنے احتجاج کا سلسلہ مزید بڑھانے پر مجبور ہو گی۔ دوسرے طرف شبقدر پیر قلعہ میں بھی بجلی کے ناروالوڈشڈنگ کے خلاف میچنیء فیڈر کے صارفین نے احتجاج کرتے ہوئے ضلع مہمند کو جانے والی سڑک ٹریفک کیلئے بند کر دی۔ احتجاجی مظاہرین کا کہنا تھا کہ بجلی ناروا لودشڈنگ کی وجہ سے علاقہ میں پینے اور مساجد میں پانی کی قلت پیدا ہو گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی لودشڈنگ کے دورانیہ میں کمی اور بلا تعطل بجلی کی سپلائی کو یقینی بنایا جائے بصور ت دیگر علاقہ عوام واپدا کے خلاف بھوک ہڑتالی کیمپ لگانے پر مجبور ہو گی۔

بنوں (نمائندہ خصوصی)کوٹ عادل کے مکینوں نے بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف واپڈا کالونی کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین نے واپڈا حکام کے خلاف شدید نعرے بازی کی احتجاجی مظاہرے سے قسمت اللہ خان, ملک شفیع زمان, ملک خنیاز ایڈوکیٹ، افضل کامرانایڈوکیٹ, سفید اللہ خان,فاروق علی خان, ملک ودؤد خان,نعیم خان,شفیع خان ودیگر نے خطاب کیا اُنہوں نے کہاکہ 24 گھنٹوں میں بمشکل ایک گھنٹہ بجلی آتی ہے وہ آنکھ مچولی کرتی ہے اس وجہ سے ہمارے گھروں میں بجلی کا ساراسامان جل چکا ہے اُنہوں نے دھمکی دی کہ اگر واپڈاحکام نے ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کی روک تھام نہ کی گئی تو علاقہ مکین احتجاج کا دائرہ وسیع کرنے پر مجبور ہوجائیں گے پھر اگر کچھ ہوا توتمام تر ذمہ داری واپڈا حکام پر عائد ہوگی آخر میں مظاہرین نے اے سی واپڈا کے ساتھ ان کے دفتر میں ملاقات کی اور اے سی نے مسئلے کے حل کی یقین دہانی کرائی مظاہرین نے پھر احتجاج ختم کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -