ایف بی آئی کی کارروائی، امریکی خاتون القاعدہ کی مدد کرنے کے الزام میں گرفتار

ایف بی آئی کی کارروائی، امریکی خاتون القاعدہ کی مدد کرنے کے الزام میں گرفتار

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) ایک امریکی خاتون کو القاعدہ کی مدد کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔ محکمہ انصاف کے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ ایف بی آئی نے حل جونز نامی 35سالہ خاتون کو ایری زونا ریاست کی فینکس ائرپورٹ سے حراست میں لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایف بی آئی کے ایجنٹ اس خاتون کی مشکوک حرکات کو دیکھ کر کافی عرصے سے اس کا پیچھا کر رہے تھے۔ ایک ایجنٹ نے القاعدہ سے ہمدردی کا اظہار کرکے اس کا اعتماد حاصل کیا جس سے اس نے بتایا کہ وہ کچھ معلومات کی بناء پر افغانستان کے شہر قندوز میں جاکر القاعدہ کے کیمپ میں شامل ہونا چاہتی ہوں لیکن کرونا وباء کی وجہ سے وہاں نہیں جاسکتی۔ اب وہ ترکی کے راستے شام میں القاعدہ کے اڈے پر جانا چاہتی تھی. محکمہ انصاف کے بیان کے مطابق اس خاتون نے افغانستان کا ٹکٹ بھی خرید لیا تھا جو اس نے واپس کردیا اور ترکی جانے کیلئے ائرپورٹ پر پہنچی جہاں سے اسے حراست میں لے لیا گیا۔ محکمہ انصاف نے بتایا کہ وہ خفیہ ایجنٹ کے ذریعے القاعدہ کو رقم بھیجنے کا ارادہ رکھتی تھی تاکہ ان کے ذریعے اسلحہ خریدا جاسکے جو بیرون ملک امریکی فوجیوں کو ہلاک کرنے کیلئے استعمال ہو۔ اس نے ایک ایجنٹ کو پانچ سو ڈالر کا گفٹ کارڈ بھی دیا تاکہ یہ رقم القاعدہ تک پہنچ سکے۔ محکمہ انصاف نے بتایا کہ بہت جلد تمام شواہد کے ساتھ اسے سزا دلوانے کیلئے عدالت میں پیش کر دیا جائے گا۔

امریکی خاتون

مزید :

صفحہ اول -