سندھ حکومت نے قومی اداروں کی نجکاری کے وفاق کے فیصلے کی مخالفت کر دی

سندھ حکومت نے قومی اداروں کی نجکاری کے وفاق کے فیصلے کی مخالفت کر دی

  

کراچی (آن لائن) سندھ حکومت نے ملک کے 19 بڑے ادارے پرائیویٹ کرنے کے وفاق کے فیصلے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاق کی جانب سے ملک کے 19 ادارے پرائیویٹ کرنے کی سازش تیارکرلی گئی ہے صوبائی وزیر زراعت محمد اسماعیل راہو نے مزید کہا کہ وفاق کو اسٹیل ملز،پی آئی اے کے روز ویلٹ ہوٹل، سروس انٹرنیشنل ہوٹل لاہور، بلوکی پاور پلانٹ، حویلی بھادر پلانٹ، نندیپور، گڈو پاور پلانٹ، اسٹیٹ لائف، او جی ڈی سی ایل، پی ایس او، سندھ انجنیئر نگ کو بھی پرائیوٹ نہیں کرنے دیں گے، وفاق نے جامشورو پاور جنریشن اور لاکھڑا پاور پلانٹ کو بھی بیچنے کی تیاری کرلی ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وفاقی حکومت کا یہ فیصلہ بدنیتی پر مبنی ہے،عوام دشمن فیصلے کی مخالفت کرتے ہیں،یہ ادارے اونے پونے داموں پر اے ٹی ایم مشینز کے حوالے کئے جائینگے۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کی نجکاری قومی مفاد کیلئے نہیں بلکہ اپنوں کو نوازنے کی پالیسی کا حصہ ہے ادارے بیچنے سے 32 ہزار755 ملازمین بے روزگار ہوجائیں گے. وزیر زراعت نے کہا کہ کروڑ نوکریاں دینے کے بجائے لاکھوں نوجوانوں کو بے روزگار کیا جا رہا ہے، سلیکٹڈ حکومت کو کوئی بھی ادارہ بیچنے نہیں دیا جائیگا، نہ ہی ملازمین کی بے روزگاری قبول کی جائے گی۔

اسماعیل راہو

مزید :

صفحہ آخر -