نالوں کی صفائی کے سو ا ارب روپے خورد برد کرلیے گئے: خرم شیرزمان

  نالوں کی صفائی کے سو ا ارب روپے خورد برد کرلیے گئے: خرم شیرزمان

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پی ٹی آئی کے رہنما خرم شیر زمان نے صوبہ سندھ کی بربادی پر پیپلزپارٹی کے وزرا کو چوڑیاں پہننے اور ڈوپٹے اوڑھنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ ہر محکمے میں بے ضابطگیاں ہورہی ہیں، کراچی کے نالوں کی صفائی کے سوا ارب خرد برد کر لئے گئے، صوبے میں اربوں کی کرپشن کا ذمہ دار کون ہے۔انصاف ہاوس کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے خرم شیر زمان نے کہا کہ وہ ورلڈ بینک کو خط لکھیں گے کہ نالوں کی صفائی کے لئے ورلڈ بینک کی جانب سے دیئے گئے سوا ارب روپے کی تحقیقات کی جائے۔خرم شیر زمان نے کہا کہ پیپلز پارٹی میں بہتری آ نہیں سکتی،کراچی کے دو اضلاع میں بارش ہوئی جس نے شہر کا برا حال کر دیا،سندھ میں 33 ارب روپے لگے مگر کہاں لگے پتہ نہیں۔انہوں نے کہا کہ ہرسال 40 سے 50 کروڑ نالوں کی صفائی کے نام پر خرچ کرتے ہیں۔پی ٹی آئی رہنما نے سوال کیا کہ بارش میں کراچی کے کمشنر کہاں تھے؟ ان کو شہر کی زمہ داری دی جو دودھ اور سبزی کے نرخ کنٹرول کرنے میں ناکام رہے۔انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس پاکستان سندھ کی بربادی کا نوٹس لیں، شہر پانی میں ڈوب گیا دو نالائق صوبائی وزرا شہر کے دورے میں سب اچھا کہہ رہے تھے لیکن یہ بتائیں کہ سوا ارب روپے کا کس کس میں بٹوارا ہوا ہے۔خرم شیر زمان نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی اب ہمیں دنیا میں بدنام نہ کرے، یہی پیپلز پارٹی دہشت گردی سے حکومت چلا رہی ہے،ہم چاہتے ہیں کہ سندھ میں مضبوط بلدیاتی نظام کی ضرورت ہے جبکہ بارش میں کہیں پر بھی سینٹری ورکرز نظر نہیں آئے۔اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی ارسلان گھمن کا کہنا تھا کہ اٹھارہویں ترمیم کا شکار صرف کراچی ہوا ہے، یہ شہر کی نہیں عوام سے رقم بٹورنے کی صفائی کرنے میں مصروف ہیں۔ارسلان گھمن نے کہاکہ کراچی کے شہری وفاق کی طرف دیکھ رہے ہیں کہ کراچی کا کوئی حل نکالے۔اس موقع پر رکن صوبائی اسمبلی عدیل خان، ڈاکٹر سیما ضیا، شہزاد قریشی، سینئر رہنما کیپٹن رضوان اور عمران صدیقی بھی موجود تھے۔

مزید :

صفحہ آخر -