جامعہ کراچی: طلبہ کی کورونا کے دوران علمی سرگرمیاں جاری

  جامعہ کراچی: طلبہ کی کورونا کے دوران علمی سرگرمیاں جاری

  

کراچی (پ ر)دفتر مشیر امور طلبہ جامعہ کراچی کی مجلس مباحثہ نے ہمیشہ کی طرح اپنی روایات برقرار رکھیں اور عالمی وبا،ورونا وائرس کے مشکل حالات میں بھی طالبعلموں کو فن تقریر و خطابت کے ہنر سے مستفید کرتے رہی۔عالمی وبا کی شروعات میں ہی ابھی جب کہ پاکستان بھر کی جامعات نے آن لائن کلاسز کا لائحہ عمل تیار نہ کیا تھا مجلس مباحثہ جامعہ کراچی نے "آن لائن پبلک سپیکنگ کورس" کو متعارف کروایا جس کے ذریعے اردو اور انگریزی زبانوں میں تقاریر، مباحثہ، منظر نگاری کی آن لائن کلاسز دی گئیں ان کلاسز میں پارلیمانی مباحثہ اور MUNکی ٹریننگ کا اہتمام کرتے ہوئے طلبہ و طالبات کو بہرہ مند کیاکرونا وائرس کے باعث جہاں تمام شعبہ ہائے زندگی منجمد ہوکر رہ گئے ہیں اور نوجوانوں میں کشمکش اور مستقبل کے حوالے سے بے چینی و اضطراب نظر آتا ہے وہیں مجلس مباحثہ نے اس مسئلہ کا ادراک کرتے ہوئے اپنے ممبران کی حوصلہ افزا کہانیاں شائع کرنے کا سلسلہ شروع کیا تاکہ اس کے ذریعے نہ صرف ممبران بلکہ قارئین کی بھی حوصلہ افزائی کی جاسکے۔مختلف ٹی وی چینلز کی رمضان ٹرانسمیشن میں ہونے والے تقریری مقابلوں میں طلبہ و طلبات کی بڑی تعداد نے نہ صرف حصہ لیا بلکہ سیمی فائنل اور فائنل میں پہنچ کر کامیابی کا سہرا اپنے سر سجایا جن میں حسن مرزا،دعا ضیا،حفصہ قنوج،وریشا فاطمہ اور سئیر محمود کا نام سر فہرست ہے۔ بین الاقوامی سطح پر بھی تقریری اور منظر نگاری مقابلہ جیتے گئے جن کی نمائندگی ادینا شعیب اور سارہ اقبال نے کی۔

مزید :

صفحہ آخر -