کنڈا کلچر کو کسی صورت برداست نہیں کیا جائے گا،اشتیاق ارمڑ

کنڈا کلچر کو کسی صورت برداست نہیں کیا جائے گا،اشتیاق ارمڑ

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ نے منگل کے روز پی کے 69 میں عوام کو بجلی کی لوڈشیڈنگ و دیگر درپیش مسائل کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کی۔ اس موقع پرپیسکوکے متعلقہ حکام اور پی کے 69 کے عوامی زعماء نے شرکت کی.وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ نے اظہار خیا ل کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کنڈا کلچر کے سخت خلاف ہے جہاں کہیں کنڈا کے حوالے سے شکایات ہیں ان کے خلاف بروقت کارروائی کی جائے. انہوں نے کہا کہ اکثرعلاقوں میں اگر کہیں پر مشکلات درپیش ہیں تو پولیس نفری لے کر غیر قانونی بجلی استعمال کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے۔وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ نے پیسکو اہلکاروں کو ہدایات جاری کیں کہ اہل علاقہ کے بجلی مسائل کے حوالے کسی بھی قسم کی کوتاہی نہ برتی جائے بلکہ عوام کے تعاون سے مسائل کو بروقت اور جلد از جلد حل کیا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عوام کو ریلیف دینے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔بجلی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے لیے صوبائی حکومت کی کاوٗشوں کا ذکر کرتے ہوئے وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم کرنے اور صوبے میں توانائی کی ضرورت پوری کرنے کے لیے چھوٹے ڈیم بنا رہی ہے جس سے صوبے کے کئی علاقوں میں لوڈشیڈنگ ختم ہو چکی ہے اور کئی چھوٹے ڈیمز تکمیل کے آخری مراحل میں ہیں۔اس طرح بجلی کی لوڈشیڈنگ پر قابو پانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔پی کے 69 کے وفدکو وزیر جنگلات اشتیاق ارمڑ نے کہا کہ ایسے تمام عناصر کی نشاندھی کریں جو غیر قانونی طور پر بجلی استعمال کر رہے ہیں اور کنڈا کلچر میں ملوث ہیں۔ واپڈا اہلکاروں کے ساتھ تعاون ہماری اخلاقی ذمہ داری ہے تا کہ مل کر بجلی لوڈشیڈنگ سے نجات حاصل کی جائے۔

مزید :

صفحہ اول -