آمدن اور اثاثوں میں قبروں سے حاصل ہونے والی کمائی بھی شامل ہونی چاہیئے،اگر۔۔۔خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں ایسا مطالبہ کردیا کہ شاہ محمود قریشی غصے سے لال پیلے ہو جائیں گے

آمدن اور اثاثوں میں قبروں سے حاصل ہونے والی کمائی بھی شامل ہونی ...
آمدن اور اثاثوں میں قبروں سے حاصل ہونے والی کمائی بھی شامل ہونی چاہیئے،اگر۔۔۔خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں ایسا مطالبہ کردیا کہ شاہ محمود قریشی غصے سے لال پیلے ہو جائیں گے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ ن کےمرکزی رہنما اور سابق وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے کہا کہ آئندہ حکومت کے ساتھ کسی قسم کے مذاکرات میں شامل نہیں ہوں گے،حکومت نیب قانون مزید سخت کر لے ہمیں اسکا کوئی ڈر نہیں، ہم ریلیف نہیں چاہتے، ہمیں جو بھگتنا تھا وہ بھگت چکے، اب انکی باری ہے،آمدن اور اثاثوں میں قبروں سے حاصل ہونے والی کمائی بھی شامل ہونی چاہیئے،اگر میرے آمدن سے زائد اثاثے ہیں تو وزیر خارجہ کے قبروں سے زائد اثاثے ہیں،لوگوں کے زیورات اتارلیے جاتے ہیں،غوث اعظم کےنعرے لگاکر 5 ہزار کے نوٹوں کی گڈیاں پکڑتے ہیں، اور اسمبلی میں آکر ہمیں لیکچر دیتے ہیں،نیب انہیں بھی پوچھے ،کل شاہد خاقان اور ان کے بیٹے پرریفرنس بنا،ان پر قبروں کا مال کھانے پر نیب ریفرنس کیوں نہیں بنا؟ شاہ محمود قریشی کو شرم آنی چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے خواجہ محمد آصف کا کہنا تھا کہ پورے خیبرپختونخوا میں کوئی بے ایمان نہیں، وہ جنت کا ٹکڑا ہے، سارے فرشتے وہاں پر رہتے ہیں، اگر ان کا ایجنڈا بدعنوانی کے خلاف ہے تو ان کی صفوں میں ایسے بڑے بڑے مہا کرپٹ لوگ بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہا کہ  بی آر ٹی، مالم جبہ کیس، بلین ٹری سونامی اور فارن فنڈنگ کیس میں استثنیٰ ملا ہوا ہے، ان کے اوپر نیب لاگو نہیں ہوتا، نیب کی یکطرفہ کارروائیاں صرف اپوزیشن پر لاگو ہوتی ہیں،آمدن اور اثاثوں میں قبروں سے حاصل ہونے والی کمائی بھی شامل ہونی چاہیئے، اگر میرے آمدن سے زائد اثاثے ہیں تو وزیر خارجہ کے قبروں سے زائد اثاثے ہیں، یہ سرعام کرپشن کرتے ہیں،سٹیج پر بیٹھ کر مذہبی نعرے لگاتےاور پیسے پکڑتے ہیں اور یہاں آکر ہمیں ڈیڑھ ڈیڑھ گھنٹہ شرافت پر لیکچر دیتے ہیں، شرم آنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ شاہ محمود قریشی پی ٹی آئی میں جانےسےپہلےمجھے ملے، پھر میاں محمد نواز شریف کو ملے،پھر اپنا قد کاٹھ بڑھا کر جنرل شجاع پاشا کو ملے اور پھر ایک بار لوٹا بنتے ہوئے پی ٹی آئی میں شامل ہوگئے۔خواجہ آصف نے کہا کہ یہاں ہمیں لیکچر دیتے ہیں خود قبروں پر بیٹھ کر غوث پاک نعرے لگا کر پانچ ہزار روپے کی گٹھیاں وصول کرتے ہیں، نیب انہیں بھی پوچھے ،کل شاہد خاقان اور ان کے بیٹے پرریفرنس بنا، اِن پر قبروں کا مال کھانے پر نیب ریفرنس کیوں نہیں بنا؟ شاہ محمود قریشی کو شرم آنی چاہیے۔

مزید :

قومی -