انسان کے قد اور کورونا وائرس کا شکار ہونے کے خطرے کے درمیان گہرا تعلق تازہ تحقیق میں سامنے آگیا

انسان کے قد اور کورونا وائرس کا شکار ہونے کے خطرے کے درمیان گہرا تعلق تازہ ...
انسان کے قد اور کورونا وائرس کا شکار ہونے کے خطرے کے درمیان گہرا تعلق تازہ تحقیق میں سامنے آگیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کے پھیلاﺅ کے حوالے سے نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے دراز قامت مردوں کو تشویشناک خبر سنا دی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے اس تحقیق میں امریکہ اور برطانیہ کے2ہزار399 لوگوں پر مشتمل سروے کیا جس کے نتائج میں معلوم ہوا کہ جن مردوں کا قد 6فٹ یا اس سے زائد ہے، ان کو کورونا وائرس لاحق ہونے کا خطرہ 2گنا زیادہ ہوتا ہے۔خواتین کا قد بھی اگر 6فٹ سے زیادہ ہو تو انہیں بھی خطرہ زیادہ ہوتا ہے تاہم اتنے قد کی خواتین اس تحقیق میں چند ہی تھیں چنانچہ ان کے متعلق حتمی نتائج سامنے نہیں آ سکے۔

آکسفورڈ یونیورسٹی کے سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ”کئی تحقیقات میں معلوم ہو چکا ہے کہ کورونا وائرس سب سے زیادہ ہوا سے لوگوں کو منتقل ہوتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ لمبے قد کے لوگ اس کا زیادہ شکار ہوتے ہیں۔ اگر وائرس متاثرہ افراد کے کھانسنے یا چھینکنے سے زیادہ پھیلتا تو لمبے قد کے لوگ زیادہ متاثر نہ ہوتے۔“ سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ”کئی تحقیقات میں ثابت ہو چکا ہے کہ کورونا وائرس ہوا میں کئی گھنٹے تک معلق رہ سکتا ہے اور وہاں سے لوگوں کو لاحق ہو سکتا ہے چنانچہ دراز قد لوگوں کو بالخصوص فیس ماسک کی پابندی اور دیگر احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا چاہیے۔“

مزید :

کورونا وائرس -