کی میرے قتل کے بعد اُس نے جفا سے توبہ ۔۔۔۔۔ سندھ حکومت نےبارش کی ہنگامی صورتحال اور نالوں کی صفائی کیلئے463 ملین روپے جاری کر دیے

کی میرے قتل کے بعد اُس نے جفا سے توبہ ۔۔۔۔۔ سندھ حکومت نےبارش کی ہنگامی ...
کی میرے قتل کے بعد اُس نے جفا سے توبہ ۔۔۔۔۔ سندھ حکومت نےبارش کی ہنگامی صورتحال اور نالوں کی صفائی کیلئے463 ملین روپے جاری کر دیے

  

کراچی((ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ بارش کی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے انہوں نے نالوں اور دیگر متعلقہ اخراجات کی صفائی کیلئے 463 ملین روپے جاری کیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق  وزیراعلیٰ سندھ  سید مراد علی شاہ نے کہا کہ 17 جولائی 2020 کو سالڈ ویسٹ ایمرجنسی اینڈ ایفیسیسی پروگرام (ایس ڈبلیو ای ای پی) کے تحت کراچی بھر میں اور سیکرٹری لوکل گورنمنٹ کے اختیار میں رکھی گئی مون سون کے خطرات کو کم کرنے اور ہنگامی کارروائیوں کےلئے خصوصی گرانٹ ان ایڈ کے تحت 200 ملین روپے کی رقم جاری کی گئی تھی۔ مراد علی شاہ نے بتایا کہ 2 جولائی 2020 کو صوبہ کے مختلف اضلاع میں نالوں کی صفائی اور مون سون کی تیاری کےلئے مزید 229 ملین روپے جاری کردیئے گئے، 229 ملین روپے میں سے کوڑا اور ملبہ اٹھانے کیلئے کمشنر کراچی کو 30 ملین روپے، کمشنر حیدرآباد کو 70 ملین روپے، کمشنر لاڑکانہ کو 20 ملین، کمشنر میرپورخاص کو 31 ملین، کمشنر شہید بینظیر آباد کو 38 ملین، 40 ملین روپے کمشنر سکھر اور سعدی ٹاؤن / مہران نالے کی صفائی / ڈی سلٹنگ کلئے 4 ملین روپے دئے گئے، اس کے باوجود اس بار سعدی ٹاؤن میں کیوں سیلاب آیا؟۔

مراد علی شاہ نے بتایا کہ بارش کی ہنگامی صورتحال سے متعلقہ کاموں کیلئے کمشنر کراچی کو مزید 90 ملین روپے دیئے جارہے ہیں، کچھ "ذمہ دار" افراد کے ذریعہ یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ فنڈز جاری نہیں کیے گئے ہیں یہ سراسر غلط اور بے بنیاد ہیں، ہم بارش کی ہنگامی صورتحال، نالوں کی صفائی اور اس طرح کے دیگر کاموں کیلئے شہر میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں،عالمی بینک کے منصوبوں کے تحت ان نالوں کو درست کیا جائے گا، ان کی پشتوں کو بہتر بنایا جائے گا اور بارش کے پانی کے آسانی سے بہاؤ کیلئے تمام گھٹن والے مقامات اور رکاوٹوں کی مرمت کی جائے گی۔

واضح رہے کہ کراچی میں دو روز قبل ہونے والی چند گھنٹے کی بارش نے سندھ اور شہری حکومت کی کارکردگی کا پول کھول کے رکھ دیا تھا ،شہر کی مرکزی شاہرائیں ندی نالوں کا منظر پیش کر رہی تھیں جبکہ بارش کے پانی میں کرنٹ آنے سے ایک کم سن بچہ بھی جاں بحق ہو گیا تھا ۔ 

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -