پیگاسس کے ذریعے دنیا بھر میں جاسوسی کی گئی ، پاک فوج کیسے محفوظ رہی ، پی ٹی اے حکام کا انکشاف

پیگاسس کے ذریعے دنیا بھر میں جاسوسی کی گئی ، پاک فوج کیسے محفوظ رہی ، پی ٹی اے ...
پیگاسس کے ذریعے دنیا بھر میں جاسوسی کی گئی ، پاک فوج کیسے محفوظ رہی ، پی ٹی اے حکام کا انکشاف

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) قائمہ کمیٹی دفاع کے اجلاس میں پی ٹی اے حکام کی جانب سے بریفنگ دی گئی کہ پیگاسس کے ذریعے دنیا بھر میں جاسوسی کی گئی ، مگر پاک فوج بروقت اقدامات کے ذریعے اس سے محفوظ رہی ۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ فوج نے پہلے ہی بروقت ایکشن لیا اور سمارٹ فون پر پابندی عائد کی ، پیگاسس آپ کا مائیک ہیک کر لیاجاتا ہے ، انکرپشن توڑی نہیں جا سکتی ، ہمارا اندازہ ہے کہ واٹس ایپ نے ان کی مدد کی ہے ۔

واضح رہے کہ واشنگٹن پوسٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں وزیر اعظم عمران خان کے موبائل فون کو ہیک کرنے کی کوشش کا انکشاف کیا تھا ۔

واشنگٹن پوسٹ اور دس ممالک کے 16میڈیا شراکت داروں کی ایک ماہ تک جاری رہنے والی تحقیقات کے مطابق بھارت میں کم از کم سات افراد پر مشتمل گروہ کا انکشاف ہوا ہے جوصحافیوں اور دیگر افراد کے ٹیلی فونز کو ہیک کر رہا ہے جبکہ یہ سہولت یا آلات صرف اور صرف حکومتوں کے پاس دہشتگردی کے خطرات سے نمٹنے کیلئے موجود ہوتے ہیں ، اس گروپ کی فہرست میں ایک ہزار سے زیادہ فون نمبرز موجود تھے جن کی نگرانی کرنا مقصود تھا ، یہ نمبرز صحافیوں ، سیاستدانوں ، بڑے تاجروں سمیت دیگر افراد کے تھے ، اس میں ایک نمبر ماضی میں پاکستان کے موجودہ وزیر اعظم نے بھی ایک بار استعمال کیا تھا مگر اس وقت عمران خان وزیر اعظم نہیں تھے ۔

معاملہ سامنے آنے پر پاکستان نے بھارت کی جانب اسرائیلی سافٹ ویئر کے استعمال سے وزیر اعظم عمران خان سمیت دیگر اعلیٰ شخصیات کے فون ہیک کرنے کا معاملے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا کہ متعلقہ ادارے معاملے کی تحقیقات کریں،اقوام متحدہ اصل حقائق منظر عام پر لائے اور اس میں ملوث بھارتی عناصرکا محاسبہ کیا جائے۔

مزید :

اہم خبریں -سائنس اور ٹیکنالوجی -