علامہ طاہر اشرفی نے پاکستان میں بسنے والی اقلیتوں کو بڑی یقین دہانی کرا دی 

علامہ طاہر اشرفی نے پاکستان میں بسنے والی اقلیتوں کو بڑی یقین دہانی کرا دی 
علامہ طاہر اشرفی نے پاکستان میں بسنے والی اقلیتوں کو بڑی یقین دہانی کرا دی 

  

فیصل آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم کے نمائند ہ خصوصی برائے بین المذاہب ہم آہنگی علامہ حافظ طاہرمحمود اشرفی نے کہا ہے کہ آئین پاکستان پر سیکولر قیادت کے دستخط ہیں،ملکی مذہبی قیادت نے بھی اس پر دستخط کیے،اس آئین پر پوری قوم نے اتفاق کیا،آئین پاکستان میں غیر مسلموں کے حقوق بھی ہیں،آئین میں کسی بھی زبردستی تبدیلی کی اجازت نہیں،جبری شادی کا اسلام میں کوئی جگہ نہیں۔

فیصل آباد سرکٹ ہاؤس میں میڈیا کانفرنس کرتے ہوئے علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ 2017ءمیں پیغام پاکستان میں خودکش حملوں کو غلط کہا،رابطوں میں کچھ کمزوریاں ہیں،اس پر کام کریں،افسوس بین الاقوامی میڈیا ہمارے اقدامات کو نہیں دیکھ رہا،اسلامی نظریاتی کونسل نے مندر کا مسئلہ حل کیا،اس پر ہندو پنجائیت نے بھی حمایت کی۔

انہوں نے کہاکہ پیغام پاکستان آئین کے بعد سب سے اہم دستاویز ہے،ہماری ریاست کے خلاف سازشیں ہورہی ہیں،دشمن قوتیں عوام اور افواج کو ایک دوسرے سے لڑانا چاہتی ہے،فوج ہمارے ماتھے کا جھومر ہے ،مذہبی طبقہ فائر بریگیڈ کا کام دیتا ہے۔علامہ طاہر اشرفی نےکہاکہ ہمیں رابطوں اور ضابطوں کی ضرورت ہے،اس ملک میں 8 ماہ سے مذہبی فساد نہیں ہوا،کہا جاتا تھا کہ توہین رسالت کا غلط استعمال ہوتا ہے،ہندو کو زبردستی اپنے خدا کے خلاف بات کروانے والے شخص کو سزا ہوگی،اسلام آباد میں نور قتل پر ہم زخمی ہیں،نور کا نہیں معاشرے کا گلا کاٹا گیا ہے،معاشرے کو بدلنا ہوگا، کس نے طے کیا کہ خاوند جو مرضی کرے،عورت سسکتی رہتی ہے کہ چپ ہی رہوں  گی سننے والا کوئی نہیں،جبری شادی کا اسلام میں کوئی جگہ نہیں۔

انہوں نے کہاکہ بیٹیوں کو باندھو نہیں یہ جانور نہیں، ان سے پوچھو،جبری شادی اور جبری تبدیلی مذہب اسلام نہیں،نظریاتی کونسل سے 2 بار استعفیٰ دیا، نواز شریف نے مجھ سے استعفیٰ کی وجہ پوچھی،اس دور میں ماضی سے بہت اچھا کام ہورہا ہے، اسلام سب سے بڑا بہنوں بیٹیوں کا محافظ ہے ،اسلام بہنوں بیٹیوں کو ذبح کرنے کا حق نہیں دیتا ،جس کو ہمارا آئین اچھا نہیں لگتا وہ کسی اور ملک چلاجائے ،ملکی مسلم و غیر مسلم قیادت نے پیغام پاکستان ترتیب دیا ،جبری شادی کی اسلام میں کوئی جگہ نہیں ،دوسرے کی حق تلفی نہ کرنا پیغام پاکستان ہے۔

مزید :

قومی -