نئی آٹو پالیسی اور الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری ، وزیر خزانہ نے اہم ہدایات کردیں

نئی آٹو پالیسی اور الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری ، وزیر خزانہ نے اہم ہدایات کردیں
نئی آٹو پالیسی اور الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری ، وزیر خزانہ نے اہم ہدایات کردیں

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر خزانہ  شوکت ترین نے ملک میں الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاہے کہ نئی آٹو پالیسی سے مختلف گاڑیوں کی پیداوار بڑھے گی، نئی پالیسی میں صارفین کے تحفظ پر خصوصی توجہ دی گئی ہے ،حکومت کے 850 سی سی تک گاڑیوں پر سیلز ٹیکس کم کرنے سے صارفین کو فائدہ ہوا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خزانہ شوکت ترین کی زیر صدارت آٹو انڈسٹری ڈویلپمنٹ اینڈ ایکسپورٹ پالیسی کے بارے میں اجلاس ہو ا۔اجلاس میں 2021-26 تک کی پالیسی کے مسودے کے مختلف پہلوؤں پر غور کیا گیا ۔اجلاس کو بریفنگ دیتےہوئےبتایاگیا کہ پاکستان کو آٹو پارٹس کی تیاری کا مرکز بنانے سمیت برآمدات بڑھانے پر توجہ ہے،مسابقتی رجحان سے آٹو کی صنعت میں معیاری اور کم نرخوں پر گاڑیاں مل سکیں گی، آٹو صنعت کی برآمدات بڑھنے سے زرمبادلہ کے ذخائر کو بھی تقویت ملے گی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ نے کہاکہ نئی آٹو پالیسی سے مختلف گاڑیوں کی پیداوار بڑھے گی، نئی پالیسی میں صارفین کے تحفظ پر خصوصی توجہ دی گئی ہے،حکومت کے 850 سی سی تک گاڑیوں پر سیلز ٹیکس کم کرنے سے صارفین کو فائدہ ہوا۔وزیر خزانہ نے الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت بھی کی ۔

مزید :

بزنس -