نیلوفر بختیار کی تقرری کو ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے دن دیہاڑے ڈاکہ اور پارلیمنٹ کی توہین قرار دے دیا

 نیلوفر بختیار کی تقرری کو ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے دن دیہاڑے ڈاکہ اور پارلیمنٹ کی ...
 نیلوفر بختیار کی تقرری کو ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے دن دیہاڑے ڈاکہ اور پارلیمنٹ کی توہین قرار دے دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پیپلزپارٹی کی مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نیلوفر بختیارکی بطور چیئرپرسن نیشنل کمیشن آن دی سٹیٹس آف ویمن کی تقرری کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیلوفر بختیار کی تقرری قانون پر دن دیہاڑے ڈاکہ اور پارلیمنٹ کی توہین کے مترادف ہے۔

 ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ چیئرپرسن کے انتخاب میں فوزیہ وقار کو 6 جبکہ نیلوفر بختیار کو 5ووٹ ملتے تھے، پارلیمانی روایات اور قوائد و ضوابط کے تحت ہونے والے الیکشن کا فیصلہ کیسے مسترد کیا جا سکتا ہے؟ نیلوفر بختیار کی تقرری جھوٹ اور پارلیمانی روایت کے خلاف ہے، نام نہاد حکومت خواتین سے متعلق ایک اہم کمیشن کو متنازعہ بنا رہی ہے جو پارلیمانی روایت کے خلاف اور پاکستان کی خواتین کی توہین ہے۔ ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ اس طرح کا کمیشن ہرگز قبول نہیں ہے۔ حکومت نیلوفر بختیار کی تقرری کا نوٹیفکیشن فوراً واپس لے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -