سانحات پاراچنار، کراچی، کوئٹہ اور احمد پور شرقیہ کے باعث ملک بھر میں عید سادگی سے منائی گئی

سانحات پاراچنار، کراچی، کوئٹہ اور احمد پور شرقیہ کے باعث ملک بھر میں عید ...

  

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر ) قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کی اپیل پر پاراچنار، کراچی، کوئٹہ اور احمد پور شرقیہ کے سانحات میں شہادتوں کے باعث ملک بھر میں عید سادگی سے منائی گئی۔ مساجد ، امام بارگاہوں، مدارس اور کھلے میدانوں میں منعقد ہونے والے عیدا لفطر کے اجتماعات میں نمازی کالی پٹیاں باندھ کر شریک ہوئے تاکہ ان سانحات میں شہید ہونے والوں کے ورثا سے اظہار یکجہتی اور دہشت گردی کے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے بے حس ارباب اختیار کو متوجہ کیا جاسکے۔ شیعہ علما کونسل پنجاب کے صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے جامعتہ النجف میں نماز عید پڑھائی ۔ اس موقع پر خطاب میں انہوں نے کہا کہ ایک عرصے سے عید کے تہوار ملت جعفریہ کے سوگوار فضا میں ہی گذر رہے ہیں۔ پاراچنار میں جمعتہ الوداع کے موقع پرہونے والی دہشت گردی سکیورٹی کے ذمہ دار اداروں کے منہ پر طمانچہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پاراچنار کو مقبوضہ کشمیر اور غزہ بنا دیا گیا ہے، جہاں دہشت گرد بھی بے گناہ شہریوں کو قتل کرتے ہیں اور احتجاج پر سکیورٹی ادارے بھی بلاتفریق فائرنگ کرتے ہیں اور احتجاج کا بنیادی حق بھی چھین رہے ہیں۔یہی حال فلسطین اور مقبوضہ کشمیر میں ہوتا ہے۔ ان کا کہنا تھاکہ پاکستان ہماری سرزمین ہے، پاراچنار کے عوام نے کبھی وطن عزیز کے خلاف کوئی آواز بلندکی ہے اور نہ سکیورٹی فورسز پر حملے کئے ہیں۔ مگر سکیورٹی اداروں میں موجود کچھ عناصر کے رجحانات اور کارکردگی پر سوالات ضرور اٹھ رہے ہیں۔ علامہ سبطین سبزواری نے سوشل میڈیا پر پاراچنار کے مسئلے کو اٹھانے پر عام لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے افسوس کا اظہار کیا کہ الیکٹرانک میڈیا نے مجرمانہ خاموشی اختیار کی اور عوامی دھرنے کو کوریج نہیں دی، جو بحیثیت پاکستانی پاراچنار کے عوام کا حق بنتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئیل ٹینکر سے تیل چوری کرتے ہوئے اپنی جانوں سے ہاتھ دھونے والے بھی پاکستانی ہیں، ان کی بہتر میڈیا کوریج ہوئی مگر پاراچنار میں ہونے والی قیامت صغریٰ کو نظر انداز کیا گیا۔ عام آد می سوچنے پر مجبور ہے کہ کیا کہ پاراچنار پاکستان کا حصہ نہیں، یا یہاں کے عوام کا خون سستا ہے۔ جن کی مظلومیت دنیا کو نہیں دکھائی دے رہی۔علامہ سبطین سبزواری نے کہا کہ اگر پاراچنار کے عوام کے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو شیعہ علماکونسل کل 30 جون کو نماز جمعہ کے بعد احتجاجی ریلیاں نکالے گی اور دھرنے دے گی، پنجا ب کا مرکزی دھرنا لاہور میں ہوگا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -