سپریم کورٹ اور جے آئی ٹی کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے : خورشید شاہ

سپریم کورٹ اور جے آئی ٹی کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے : خورشید شاہ

سکھر(این این آئی)قومی اسمبلی اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی اور سپریم کورٹ کو متنازع بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ قائد حزب اختلاف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کو مشورہ دے رہا ہوں کہ اگر وہ نااہل قرار پائیں تو نیا وزیراعظم لائیں۔ انہوں نے کہا کہ 2018 میں عمران خان سے پوچھیں گے کہ وکٹیں کیسی گرتی ہیں ٗ جب گھوڑے ریس کیلئے میدان میں آتے ہیں تو بدکتے ہیں لیکن جب وہ دوڑتے ہیں تو پتہ چلتا ہے کون طاقتور ہے۔ فردوس عاشق اعوان اور بابر اعوان کے پی ٹی آئی میں جانے سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ حکومت اورنج ٹرین اور بڑے بڑے منصوبوں کے دعوے تو کرتی ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ بہاولپور میں برن سینٹر تک نہیں ہے اگر برن سینٹر ہوتا تو بہاولپور میں اتنی اموات نہیں ہوتیں۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر نے کہاکہ اسلامی ریاستیں جل رہی ہیں اور ہمارے حکمران بین بجا رہے ہیں جبکہ عالم اسلام مشکلات کا شکار ہے۔انہوں نے کہا کہ عالم اسلام کے لیڈر تماشا دیکھ رہے اور ہم تماشہ بن رہے ہیں، 35 اسلامی ملکوں کا الائنس بن گیا باقی کا کیا ہوگا۔قائد حزب اختلاف نے کہا کہ ہمارے حکمرانوں میں سچ اور حق کہنے کی جرات ختم ہوگئی ہے، وہ مکمل طور پر ناکام ہوچکے ہیں،20 کروڑ عوام آنکھیں کھولیں کہ ملک میں کیا ہورہا ہے۔

خورشید شاہ

مزید : علاقائی