پاکستان ، کو یت کی کوشش کامیاب نہ ہو سکیں سعودی عر ب کا 13مطالبات سے پیچھے ہٹنے سے انکار

پاکستان ، کو یت کی کوشش کامیاب نہ ہو سکیں سعودی عر ب کا 13مطالبات سے پیچھے ...

ریاض(اے این این) خلیج کے تنازعے کے خاتمے کیلئے پاکستان اورکویت سمیت دیگرممالک کی کوششیں تاحال کامیاب نہ ہوسکیں، سعودی عرب نے مذاکرات کیلئے13 مطالبات سے پیچھے ہٹنے سے انکار کر دیا ہے جس پر قطر برہم ہو گیا ورسعودی موقف کو نا قابل قبول قراردے دیا،متحدہ عرب امارات نے خبردارکیاہے کہ مطالبات مسترد کرنے کی صورت میں قطر کو نہ ختم ہونے والی تنہائی کا سامنا کرنا ہو گا ۔ امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن نے تنازع میں باقاعدہ ثالثی کا کردار ادا کرنے والے ملک کویت کے وزیر برائے کابینہ امور شیخ محمد عبداللہ الصباح سے ملاقات کی جبکہ ا ن کی اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اینٹونیو گوٹیریس سے بھی ملاقات متوقع ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے واشنگٹن میں امریکی میڈیا سے انٹرویو میں کہا کہ بائیکاٹ کرنے والے ممالک کی جانب سے قطر کو پیش کیے گئے 13 مطالبات کی فہرست کے حوالے سے کوئی مذاکرات نہیں ہوں گے، گیند قطر کے کورٹ میں ہے جس کو خطے میں انتہا ء پسندی اور دہشت گردی کے لیے حمایت کو روکنا ہو گا۔ روس میں متحدہ عرب امارات کے سفیر عمر غباش نے برطانوی میڈیا سے انٹرویومیں کہاکہ قطر کا بائیکاٹ کرنے والے عرب ممالک خلیجی ریاست پر نئی پابندیاں عائد کرنے پر غور کر رہے ہیں۔ قطر کو خلیج تعاون کونسل اور ایران میں سے کسی ایک کو چننا ہوگا۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ قطر ایران کے ہاتھوں میں جھولتا رہا اور اس نے طویل عرصے تک شدت پسند جماعتوں کو سپورٹ کیا ہے ۔ اماراتی سفیر نے کہا کہ قطر کی جانب سے سعودی عرب، امارات، بحرین اور مصر کے مطالبات کا مثبت صورت میں جواب سامنے نہیں آ رہا ۔ انہوں نے واضح کیا کہ مطالبات مسترد کرنے کی صورت میں قطر کو نہ ختم ہونے والی تنہائی کا سامنا ہو گا۔دوحہ کو خلیج تعاون کونسل سے خارج کر دینا واحد مجوزہ آپشن نہیں ،تجارتی شراکت داروں کو بھی ہمارے یا پھر قطر کے ساتھ معاملات کا اختیار دیا جائے گا۔ ادھر قطری وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمان نے کہاہے کہ عرب قطر تنازع پر سعودی عرب کا موقف نا قابل قبول ہے، سعودی عرب کا بات چیت سے انکار عالمی تعلقات کے اصولوں کی خلاف ورزی ہے۔ سعودی عرب مطالبات کی لسٹ پیش کر کے مذاکرات سے انکار نہیں کرسکتا۔ دریں اثناعرب ممالک کی جانب سے قطر سے کیے گئے 13 مطالبات کے بعد خلیجی ممالک کے سفارت کاروں نے واشنگٹن میں امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن سے ملاقاتیں کی۔ قطر کو ان مطالبات کو پورا کرنے کے لیے سعودی عرب کی جانب سے فراہم کی گئے ایک ہفتے کی مہلت کے دوران قطری وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی نے امریکی وزیر خارجہ سے ملاقات کی،تنازع کے حل میں پیشرفت کے لیے ان کی اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل اینٹونیو گوٹیریس سے بھی ملاقات متوقع ہے ۔

مزید : علاقائی