وزیراعظم کا دورہ احمد پور شرقیہ، سانحہ کے زخمیوں کی عیادت، امدادی چیک تقسیم، شہداء کے لواحقین اور زخمیوں کو ملازمتیں فراہم کرنے کا اعلان

وزیراعظم کا دورہ احمد پور شرقیہ، سانحہ کے زخمیوں کی عیادت، امدادی چیک تقسیم، ...

  

بہاولپور (آئی این پی) وزیراعظم نواز شریف نے احمد پور شرقیہ میں آئل ٹینکر کے سانحہ کے بعد اپنا دورہ برطانیہ مختصر کرکے عید کے روز وطن واپس آکر سانحہ میں زخمی ہونے والوں کی عیادت کی اور ان میں امدادی چیک بھی تقسیم کئے جبکہ وزیراعظم کو سانحہ کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی‘ اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف‘ تعلیم کے وزیر مملکت میاں بلیغ الرحمن اور دیگر اہم شخصیات بھی موجود تھیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نواز شریف عید کے روز لندن سے براہ راست بہاولپور پہنچے جہاں پر انہوں نے سب سے پہلے وکٹوریہ ہسپتال کا دورہ کیا اور زخمیوں کی عیادت کی جبکہ وزیراعظم کو سانحہ کے حوالے سے انتظامیہ نے بریفنگ دی اس کے بعد وزیراعظم نے اپنے خطاب میں شہید ہونے والوں کے لواحقین اور زخمیوں کو حکومت فوری طور پر ملازمتیں فراہم کرنے کا اعلان کیا۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں وزیراعظم نے کہا کہ وہ اس واقعہ پر بہت دکھی ہیں یہ ایک المناک سانحہ ہوا ہے جس میں بڑی تعداد میں لوگ جاں بحق ہوئے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ حادثے کی باضابطہ انکوائری کروائی جائے گی کہ ٹینکر کی حالت کیسی تھی جس کمپنی کا ٹینکر تھا کیا ان کی بھی ذمہ داری بنتی ہے یا نہیں سب لوگوں نے ذمے داری کو پورا کیا یا نہیں ہر چیز کی تہہ تک جایا جائے گا۔ اس معاملے کو ایسے ہی نہیں چھوڑاجائے گا اس واقعہ کو مثال بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ لندن سے فوری طور پر واپس آکر کوئی احسان نہیں کیا اپنا فرض ادا کیا ہے اوراپنا فرض پورے جذبے اور ایمانداری سے ادا کرتے رہیں گے۔وزیرعظم نے کہا کہ میں اس موقع پر کوئی سیاسی بات نہیں کرنا چاہتا مگر کچھ لوگوں نے اس سانحہ پر سیاست کرنے کی کوشش کی ہے جو افسوسناک ہے کیونکہ سیاست برائے سیاست ایسے مواقع پر نہیں کرنی چاہئے۔انہوں نے مزید کہا کہ دکھی لوگوں کے ساتھ غم بانٹنے کی ضرورت ہے جبکہ سانحات پر سیاست کرنا افسوسناک امر ہے کسی کو بھی ایسا نہیں کرنا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ ہم ملکی معیشت کو ٹھیک کرنے کی کوشش کررہے ہیں اسی کے نتیجے میں بے روزگاری ختم ہوگی۔ ترقیاتی کاموں کو آگے بڑھایا جارہا ہے بہت سے علاقوں میں بے روزگاری کا خاتمہ ہوگا۔ زراعت کا شعبہ ہو یا صنعت کا ہر شعبے میں ترقی کے ایجنڈے کو آگے بڑھا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے فوری طور پر ریلیف کا کام کیا اور ہیلی کاپٹروں کے ذریعے زخمیوں کو ملتان اور لاہور منتقل کیا گیا۔ وزیراعظم نے اپنے خطاب میں کہا کہ شہباز شریف نے فوری طور پر بہاولپور آکر بحالی کے کاموں کی نگرانی کی میں تمام شہیدوں کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتا ہوں اﷲ تعالیٰ شہیدوں کو جوار رحمت میں جگہ دے،پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے‘ مجھے بہت دکھ ہوا حادثے کی اطلاع ملتے ہی شہباز شریف یہاں پہنچ گئے اور ریسکیو کے کاموں کی نگرانی کی اور انتظامیہ نے بھی بھرپور کوششیں کیں اور میں اس پر شہباز شریف کو شاباش دیتا ہوں اور ذمہ دار ہونے کا ثبوت دیا اور ایسا ہی ہونا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ شہداء کے ورثاء کو ملنے والی امدادی رقم زندگی کا نعم البدل نہیں ہوسکتی کیونکہ زندگی ایک قیمتی اثاثہ ہوتی ہے یہ دکھوں کا مداوا کرنے کی ایک کوشش ہے تاکہ ان کی مشکلات میں کچھ کمی آسکے۔

مزید :

صفحہ اول -