پاکستان کا انسداد دہشتگردی میں کردار مسلمہ، امریکہ بھارت کا بھاشن بے بنیاد ہے: چین

پاکستان کا انسداد دہشتگردی میں کردار مسلمہ، امریکہ بھارت کا بھاشن بے بنیاد ...

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں)چین نے امریکہ اوربھارت کی طرف سے پاکستان کوسرحدپاردہشت گردی روکنے کابھاشن دیئے جانے پراپنے مثالی دوست ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے پاکستان کابھرپوردفاع کرتے ہوئے کہاہے پاکستان دہشتگردی کیخلاف جنگ میں فرنٹ لائن پرکھڑاہے ، عالمی برادری پاکستان کی کاوشوں وقربانیوں کااعتراف کرتے ہوئے اسکے ساتھ تعاون بڑھا ئے۔چینی وزارت خارجہ کے ترجمان لوکانگ نے بیجنگ میں صحافیوں سے گفتگو میں کہا دہشت گردی صرف پاکستان کانہیں بلکہ عالمی مسئلہ ہے اورپاکستان د ہشت گردی کیخلاف عالمی جنگ میں فرنٹ لائن اسٹیٹ کاکرداراداکررہاہے ۔عالمی برادری کونہ صرف دہشت گردی کیخلاف جنگ میں پا کستان کی کوششوں اورقربانیوں کااعتراف کرناچاہیے بلکہ اس سلسلے میں اس کیساتھ عالمی تعاون بڑھایابھی جاناچاہیے۔ چین ہر قسم کی د ہشت گردی کی مذمت کرنے سمیت دہشت گردی کو کچھ ممالک سے منسلک کرنے کی بھی مخالفت کرتاہے ۔امریکہ کی طرف سے افغا نستا ن کے استحکام میں بھارت کے کردارکااعتراف کرنے پرچینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہاافغانستان میں امن واستحکام کاقیام علاقائی ا من واستحکام کے مفاد میں ہے،ہماراہمیشہ یہ موقف رہاہے کہ افغانستان میں امن عمل افغانوں کا اپنے طورپرشروع کردہ اورانہی کی سرپرستی میں ہوناچاہیے،ہم اس سلسلے میں تمام فریقوں کی تعمیری کوششوں کاخیرمقدم کریں گے ۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی اور امریکی صدر ڈو نلڈ ٹرمپ کے مشترکہ اعلامیہ میں دہشت گردی کے حوالے سے بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے چین کا مزید کہنا ہے پاکستان انسد ا د دہشت گردی کی کوششوں میں اپنا بھرپور کردار ادا کررہا ہے اور بیجنگ سمجھتا ہے کہ انسداد دہشت گردی کے حوالے سے عالمی تعاون کو بڑھانے سمیت اس ضمن میں پاکستان کی کوششوں کو تسلیم کیا جانا چاہیے ،بھارت امریکہ تعلقات کے حوالے سے لو کانگ کا کہنا تھا چین ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات کے فروغ کو سراہتا ہے اور سمجھتا ہے کہ ایسے تعلقات خطے کے امن و استحکام کو برقرار رکھنے میں مثبت اور تعمیری کردار ادا کرتے ہیں۔واضح رہے نریندر مودی اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ہونیوالی ملاقات کے بعد جاری کردہ اعلامیہ میں پاکستان سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ وہ اپنی سرزمین دہشت گردی کیلئے استعمال ہونے سے روکے۔

مزید : صفحہ اول