سانحہ احمد پور شرقیہ، جاں بحق 26افراد کے ورثا، ملتان میں زیر علاج زخمیوں میں امدادی چیک تقسیم

سانحہ احمد پور شرقیہ، جاں بحق 26افراد کے ورثا، ملتان میں زیر علاج زخمیوں میں ...

  

بہاولپور ،خانقاہ شریف ( بیورور پورٹ ،نمائندہ پاکستان) سانحہ احمد پور شرقیہ میں ہلاک ہونے والے 26افراد (بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

جن کی شناخت ہو چکی ہے ان کے ورثاء کو وزیر اعلیٰ پنجاب کی جانب سے سرکٹ ہاؤس میں20 ،20 لاکھ روپے کے امدادی چیک دیے گئے۔اس موقع پر صوبائی وزیر امداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ، وزیر مملکت تعلیم و امور داخلہ انجینئر بلیغ الرحمن، سینیٹر سعود مجید، اراکین اسمبلی مخدوم سید علی حسن گیلانی، عدنان فرید قاضی، سابق ایم پی اے سمیع اللہ چودہری، ڈپٹی مےئر منیر اقبال چنڑ، کمشنر ثاقب ظفر، آر پی او راجہ رفعت مختار، ڈی سی رانا محمد سلیم افضل، ڈی پی او ڈاکٹر محمد اختر عباس، مسلم لیگ (ن) کے عہدیداران ، سول سوسائٹی کے نمائندگان اور سانحہ احمد پور شرقیہ کے شہداء اور زخمیوں کے ورثاء موجود تھے۔صوبائی وزیر امداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ اور وزیر مملکت تعلیم و داخلہ بلیغ الرحمن نے اپنے اپنے خطاب میں کہا کہ احمد پور شرقیہ کے المناک واقعہ سے ہر شخص دکھی اور غمگین ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے بہاول پور آ کر شہداء اور زخمیوں کے لواحقین سے اظہار افسوس اور دعائے مغفرت کرنا تھی مگر لاہور میں موسم خراب ہوجانے کے باعث وہ نہ آسکے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے سانحہ احمد پور شرقیہ کے واقعہ کے فوراً بعد بہاول پور کا دورہ کیا اور بہاول وکٹوریہ ہسپتال میں ریسکیو کاموں کی براہ راست نگرانی کی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت، ریسکیو1122 ، پاک فوج اور دیگر اداروں نے شاندار طریقہ سے ریسکیو کے کام انجام دیے اورمریضوں کو بروقت ہسپتالوں میں منتقل کرایا گیا ہے ۔ ریسکیو کے کاموں میں پاک فوج اور حکومت پنجاب کے ہیلی کاپٹرز نے بھی حصہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی گڈ گورننس سے تمام متعلقہ اداروں نے اس سانحہ کے بعد فوری طور پر کارروائی کرتے ہوئے ریسکیو کا عمل مکمل کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے فرائض ادا کررہی ہے اور تمام لواحقین سے مستقل رابطہ میں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انسانی سانحہ کو سیاست کے لیے استعمال نہ کیا جائے۔سینیٹر سعود مجید اورایم این اے مخدوم علی حسن گیلانی نے اپنے اپنے خطاب میں کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں مسلم لیگ(ن) کی قیادت، عہدے داران اور ورکرز ساتھ کھڑے ہیں اور غم میں برابر کے شریک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان نے لندن میں اپنا علاج اور دیگر مصروفیات ترک کے فوری طور پر بہاول پور کا دورہ کیا اور شہداء کے ورثاء اور زخمیوں کے لواحقین سے ملاقات کر کے افسوس کا اظہار کیا اور زخمیوں کے بہترین علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کرنے کے لیے ہدایات جاری کیں۔ایم پی اے عدنان فرید قاضی اور سابق ایم پی اے سمیع اللہ چودہری نے اپنے خطاب میں کہا کہ125 شہداء کی ٹیگنگ کر کے ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے نمونے حاصل کر لیے گئے ہیں اور اس واقعہ میں جاں بحق ہونے والے مزید افراد کی شناخت کے لیے ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے بہاول وکٹوریہ ہسپتال میں نمونہ جات لیے جار ہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سانحہ میں متاثرین کی مالی امداد کا کام تیزی سے مکمل کر لیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ متاثرہ خاندان کے افراد کو ملازمت دینے اور اس علاقہ میں سہولیات فراہم کرنے کے لیے ہدایات جاری کی ہیں۔ نیز ضرورت مند گھرانوں کو محکمہ لائیو سٹاک کی جانب سے دودھ دینے والی گائے اور بھینسیں دی جائیں گی اور اس سلسلہ میں محکمہ لائیو سٹاک کی ٹیمیں گھر گھر سروے کر رہی ہیں۔اس موقع پر سانحہ احمد پور شرقیہ کے مرحومین کے لیے دعائے مغفرت کی گئی۔ بعدازاں صوبائی وزیر امداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ، وزیر مملکت بلیغ الرحمن اور اراکین اسمبلی نے سانحہ احمد پور شرقیہ میں ہلاک ہونے والے26افراد جن کی شناخت ہو چکی ہے، انہیں وزیر اعلیٰ پنجاب کی جانب سے20،20 لاکھ روپے کے امدادی چیک دیے۔تقریب میں ممبر قومی اسمبلی علی حسن گیلانی نے مرحومین کے درجات کی بلندی کے لیے فاتحہ خوانی کروائی جبکہ ممبر صوبائی اسمبلی قاضی عدنان فرید نے سانحہ احمد پور شرقیہ کے زیر علاج زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے خصوصی طور پر دعا کی۔آئل ٹینکر حادثہ میں آتش زدگی کا شکار ہو کر جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین محمد آصف ولد محمد اسلم ، وزیر بی بی والدہ محمد عنصر، عبدالحمیدوالد محمد نوید، امام شاہ والد دلدار شاہ، سلمیٰ بی بی والدہ محمد کاشف، محمد خالد والد سدرہ بی بی ، اللہ دتہ والد محمد اسلم ، مشتاق احمد والد علی حسن، نسیم بی بی زوجہ عبدالشکور، غلام قادر والد محمد اختر، عبدالعزیز والد محمد الطاف، صبا بی بی زوجہ محمد جمیل، تاج بی بی زوجہ ملازم حسین، ممتاز بی بی زوجہ سعیداحمد، سعید احمد والد شہزاد، زبیدہ بی بی زوجہ محمد قاسم، محمد رفیق والد محمد سلیم، خادم والد محمد ظفر، شفیع محمد والد الہٰی بخش، غلام حیدر والد نادر علی، محمد الطاف والد محمد ابرار، محمد کبیر والد بخت علی، معراج بی بی زوجہ ممتاز، حسینہ بی بی والدہ محمد جمیل، غلام حسین والد نعیم حسین، نصیر اقبال والد مبشر اقبال کو بیس بیس لاکھ روپے امدادی رقوم کے چیک دیے گئے۔

ملتان (سپیشل رپورٹر، وقائع نگار )وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی ہدایت پر عید الفطر کے دوسرے روز ملتان میں سانحہ احمد پور شرقیہ (بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

کے زیر علاج زخمیوں میں امدادی چیک تقسیم کئے گئے ۔ برن یونٹ میں حکومت کی جانب سے زخمیوں کو 10لاکھ روپے فی کس کے چیک دیئے گئے اس موقع پر ایم این اے جاوید علی شاہ ، ایم پی اے رانا محمود الحسن ، حاجی احسان الدین قریشی ، کمشنر ملتان بلال احمد بٹ ، آرپی او اعظم سلطان تیموری اور ڈپٹی کمشنر نادر چٹھہ بھی موجود تھے ۔ امدادی چیک تقسیم کرتے ہوئے ایم این اے جاویدعلی شاہ نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب نے سانحہ کے فوری بعد تمام زخمیوں کو فوری طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت کی اور امدادی کاروائیوں کی بھی براہ راست نگرانی کرتے رہے ۔المناک حادثے نے پوری قوم کو عید الفطر کے موقع پر سوگوار کردیا ۔ حکومت پنجاب آخری مریض کے صحت یاب ہونے تک چین سے نہیں بیٹھے گی ۔ ایم پی اے رانا محمودالحسن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملتان برن یونٹ میں تمام زخمیوں کو عالمی معیار کی طبی امدا د فراہم کی جارہی ہے ، ملتان کی انتظامیہ نے سانحہ کے فوری بعد مثالی اقدامات کرکے کئی انسانی جانوں کو بچایا ۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے حاجی احسان الدین قریشی نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب تمام حکومتی مشینری کو فعال کرکے بہترین منتظم ہونے کا ثبوت دیا جس کے باعث درجنوں انسانی جانوں کا تحفظ ممکن ہوا۔برن یونٹ سمیت تمام ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرکے بہترین طبی سہولیات دی گئیں ۔ کمشنر ملتان بلال احمد بٹ نے کہا کہ زخمیوں کو بذریعہ خصوصی جہاز اور ہیلی کاپٹر بہاولپور سے فوری ملتان منتقل کیا گیا جس کی بدولت کئی جانین لقمہ اجل بننے سے محفوظ رہیں ۔انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ کو زخمیوں کے لواحقین کیلئے بہترین انتظامات کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے انچارج برن یونٹ سنٹر ڈاکٹر ناہید چوہدری نے کہا کہ بہاولپور سے 60سے زائد مریض برن یونٹ منتقل کئے گئے جن میں سے بیشتر 60فی صد سے زائد جل چکے تھے تاہم تمام زخمیوں کو بہترین سہولیات فراہم کی جارہی ہیں ۔ قبل ازیں برن یونٹ میں 22زخمیوں اور جاں بحق افراد کے اہل خانہ کو امدادی چیک فراہم کئے گئے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -