”خدارا مجھے بچا لو،6روز سے بھوکا ہوں ، جیل میں مجھ پر بچھو چھوڑے گئے ہیں“، کار سرکار میں مداخلت پر گرفتار جمشید دستی کی دہائیاں

”خدارا مجھے بچا لو،6روز سے بھوکا ہوں ، جیل میں مجھ پر بچھو چھوڑے گئے ہیں“، ...
”خدارا مجھے بچا لو،6روز سے بھوکا ہوں ، جیل میں مجھ پر بچھو چھوڑے گئے ہیں“، کار سرکار میں مداخلت پر گرفتار جمشید دستی کی دہائیاں

  

سرگودھا (ڈیلی پاکستان آن لائن ) کار سرکار میں مداخلت کے الزام پر گرفتار رکن قومی اسمبلی جمشید دستی نے اپنے ساتھ جیل میں ہونے والے تشدد پر روتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں دوران حراست شدید ٹارچر کیا جا رہا ہے اور ان پر جیل میں بچھو چھوڑے گئے ہیں ۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق جمشید دستی کو اے ٹی سی جج کی رخصت کے باعث آج سیشن جج کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں انہوں نے سیشن جج کو مردہ بچھو بھی دکھایا۔

پیشی کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے رکن قومی اسمبلی نے کہا کہ جیل میں مجھ پر بچھو چھوڑے گئے ہیں اور ایک کو میں نے مار بھی دیا ۔ انہوں نے عدالت کو مردہ بچھو دکھاتے ہوئے کہا کہ مجھے سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ 

جمشید دستی نے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے انصاف کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ میری بہن کو کینسر اور والدہ بھی بیمار ہیں مگر اس کے باوجود جمہوری دور میں میرے ساتھ یہ سب ہو رہا ہے ۔ مجھے جیل میں شدید ٹارچر کیا جا رہا ہے ۔ 6روز سے بھوکا ہوں ، کھانا تک نہیں دیا گیا اور اس کے ساتھ ساتھ تشدد بھی کیا جا رہا ہے ۔”خدارا مجھے بچا لو“۔

رکن قومی اسمبلی جمشید دستی نے مزید کہا کہ سیل میں بچھو اور چوہے ہیں اور کھانے پینے کو بھی کچھ نہیں دیا جا رہا ۔ ایسا تو مشرف دور میں سیاسی قیدیوں کے ساتھ بھی نہیں ہوا جو میرے ساتھ کیا جا رہا ہے ۔ 

مزید : سرگودھا