ہرکھانے کے بعد میٹھا کھانے کودل کیوں چاہتاہے اور کیا میٹھا کھانا چاہیے؟ انتہائی مفید معلومات جوآپ کی زندگی بدل دیں

ہرکھانے کے بعد میٹھا کھانے کودل کیوں چاہتاہے اور کیا میٹھا کھانا چاہیے؟ ...
ہرکھانے کے بعد میٹھا کھانے کودل کیوں چاہتاہے اور کیا میٹھا کھانا چاہیے؟ انتہائی مفید معلومات جوآپ کی زندگی بدل دیں

  

لندن(نیوزڈیسک) اکثر آپ نے محسوس کیا ہوگا کہ کھانا کھانے کے بعد آپ اپنا پیٹ بھراہواہونے کی بجائے میٹھا کھانے کی حاجت محسوس کرتے ہیں۔ماہرین نے اس بات کے متعدد جواب دئیے ہیں۔کچھ ماہرین غذا کا کہنا ہے کہ بچپن ہی سے انسان کی تربیت اس طرح ہوتی ہے کہ ہر کھانے کے بعد کوئی میٹھی چیز کھانی ہے جس کی وجہ سے انسان کی یہ عادت بن جاتی ہے کہ وہ کھانا کھانے کے بعد میٹھا کھاتا ہے جبکہ کچھ گھروں میں یہ روایت ہوتی ہے کہ کھانے کے بعد میٹھے سے لطف اندوز ہواجاتا ہے۔کچھ ماہرین کا کہنا ہے کہ انسانی دماغ چاہتا ہے کہ کھانے کے بعد اسے کسی میٹھی چیز سے لطف اندوز کروایا جائے۔ایک نظریہ یہ بھی ہے کہ کھانا کھانے کے کچھ دیر بعد انسان کا بلڈ پریشر کم ہوسکتا ہے اور ایسے میں اسے تھکان، بے خوابی، پسینے آنا،کمزوری اور بلاوجہ بھوک لگ سکتی ہے لہذا اس حالت سے بچنے کے لئے میٹھا ایک بہترین چیز ہے۔تاہم ماہرین کا اس کہنا ہے کہ کھانے کے بعد میٹھا نہ کھانے کی صورت میں انسان اپنے کھانے کو نامکمل محسوس کرتا ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -