پولیس اہلکار کو گاڑی کے نیچے کچل کر جاں بحق کرنے والے رکن اسمبلی عبد المجید اچکزئی کا ایک اور کیس سامنے آگیا ،ماضی میں بھی ایک شخص کے ساتھ ایسا سلوک کیا کہ جان کر آپ بھی غصے سے آگ بگولہ ہو جائیں گے

پولیس اہلکار کو گاڑی کے نیچے کچل کر جاں بحق کرنے والے رکن اسمبلی عبد المجید ...
پولیس اہلکار کو گاڑی کے نیچے کچل کر جاں بحق کرنے والے رکن اسمبلی عبد المجید اچکزئی کا ایک اور کیس سامنے آگیا ،ماضی میں بھی ایک شخص کے ساتھ ایسا سلوک کیا کہ جان کر آپ بھی غصے سے آگ بگولہ ہو جائیں گے

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن ) انسداد دہشت گردی کی عدالت نے رکن بلوچستان اسمبلی عبدالمجید اچکزئی کی گاڑی کی ٹکر سے ٹریفک سارجنٹ کی ہلاکت اور ایک شخص کے اغواء کے کیس میں 7 روزہ مزید ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔ایم پی اے عبدالمجید اچکزئی کی گاڑی کی ٹکر سے ٹریفک سارجنٹ حاجی عطاءاللہ کی ہلاکت کے کیس میں ایم پی اے عبدالمجید اچکزئی کو پولیس کی حراست میں 5 روزہ ریمانڈ کی تکمیل پر متعلقہ تھانے سے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کیا گیا۔کیس کی سماعت عدالت کےجج داود خان ناصر نے کی، سماعت کے موقع پر پولیس حکام کی جانب سے عدالت سےایم پی اے کے مزید ریمانڈ کی درخواست کی گئی جسے منظور کرتے ہوئے انہیں سات روزہ مزید ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا۔اس دوران عدالت میں عبدالمجید اچکزئی کےخلاف ایک شخص کے اغواءکے کیس میں نامزدگی بھی سامنے لائی گئی جس پر اغواءکے کیس میں بھی ملزم عبدالمجید اچکزئی کو 7 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیاگیا۔عبدالمجید اچکزئی سیٹلائٹ ٹاون میں ایک شخص کےاغواءمیں نامزدتھے، ان کےخلاف سال 2009 میں دفعہ 365 کے تحت ایک شخص کےاغواءکامقدمہ درج ہوا تھا، بعد میں کیس کی سماعت ملتوی کردی گئی، جس کے بعد عبدالمجید اچکزئی کو واپس متعلقہ کینٹ تھانہ منتقل کردیا گیا۔

مزید : کوئٹہ