وزارت ریلوے کا ملک بھر میں ریلوے کی زمینوں پر ”کارٹ مارٹ“بنانے کا فیصلہ

وزارت ریلوے کا ملک بھر میں ریلوے کی زمینوں پر ”کارٹ مارٹ“بنانے کا فیصلہ
وزارت ریلوے کا ملک بھر میں ریلوے کی زمینوں پر ”کارٹ مارٹ“بنانے کا فیصلہ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزارت ریلوے کا ملک بھر میں ریلوے کی زمینوں پر ”کارٹ مارٹ“بنانے کا فیصلہ ، محکمہ ریلوے کا لینڈ ڈیپارٹمنٹ کو مختلف شہروں اور قصبوں میں ریڑھیوں کے خوبصورت بازار قائم کرنے کے لیے مناسب جگہوں کی نشاندہی، بازاروں اور ریڑھیوں کی خوبصورت ڈیزائننگ سمیت دیگر تفصیلات کو حتمی شکل دینے کی ہدایات ،کارٹ مارٹ کے قیام کا فیصلہ وفاقی وزیر ریلوے سعد رفیق کی زیرصدارت اعلیٰ سطح کے اجلاس میںمنظوری دی ۔

اجلاس میں انہوں نے قرض حسنہ فراہم کرنے والے نیک نام ادارے ”اخوت“کے ایگزیکٹوڈائریکٹر ڈاکٹر امجد ثاقب سے بھی رابطہ کیا اور اس تجویز سے آگاہ کرتے ہوئے درخواست کی کہ اخوت ان ریڑھی بازاروں میں مستحقین کو ریڑھیوں پر کاروبارکے لیے بغیرسود کے قرض فراہم کرے ،ڈاکٹرامجدثاقب نے وفاقی وزیر کو بتایا کہ ”اخوت“اس سلسلے میں پہلے ہی ریڑھیوں کے ڈیزائن تیار کر چکی ہے۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ریلوے کی زمینوں پر کارٹ مارٹ بناکرجہاں ریلوے کی مختلف شہروں میں قیمتی زمینوں کا قبضہ گروپوں سے تحفظ کیاجاسکے گاوہیں ہزاروں پاکستانیوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرکے غربت اور بے روزگاری کے خلاف جہاد بھی کیا جاسکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ ان بازاروں سے سستی اور معیاری اشیاصارفین کو ملنے کے ساتھ ساتھ شہروں میں تجاوزات میں بھی کمی آئے گی۔ خواجہ سعد رفیق نے ہدایت کی کہ لینڈ ڈیپارٹمنٹ ایسی منصوبہ بندی کرے کہ کم سے کم جگہ پر زیادہ سے زیادہ شہریوں کو کاروبار کی سہولت فراہم کی جاسکے، ان تمام جگہوں پر پانی، بجلی، سیوریج اور پارکنگ جیسی بنیادی سہولتیں فراہم ہوں، ریلوے ”کارٹ مارٹ“ کے لیے مختلف جگہوں کی نہ صرف چاردیواری کرے بلکہ ریڑھیوں کے اُوپر دیدہ زیب چھت بھی بنا کر دی جائے۔

خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ریلوے کا ایک قومی ادارے کے طور پر وسائل کا اپنے غریب اور مستحق عوام کے لئے استعمال ایک جمہوری حکومت کی ذمہ داری بھی ہے اور کارثواب بھی ہے۔ انہوں نے لینڈ ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت کی کہ اس منصوبے کو جنگی بنیادوں پر مکمل کیاجائے۔اجلاس میں چیف ایگزیکٹوآفیسر پاکستان ریلویز محمدجاویدانور، ممبرفنانس غلام مصطفی، مشیر ریلویز انجم پرویز، ایڈیشنل جنرل منیجرعبدالحمیدرازی، ایڈیشنل جنرل منیجرانفراسٹرکچرہمایوں رشید، جوائنٹ ڈائریکٹرپراپرٹی اینڈلینڈحفیظ اللہ سمیت دیگراعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

وفاقی وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے بارشوں کے دوران ٹرینوں کی آمدورفت میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے ریلوے حکام کو ہدایات جاری کیں ہیں کہ وقت کی پابندی کو یقینی بنانے کے لیے تمام ممکن اقدامات کیے جائیں، ہمارے مسافر ہمارے لیے اہم ہیں، بارشوں اوردھند میں آپریشنل مسائل پیداہوتے ہیں ان کوجلد حل کیاجائے۔ ریلوے ہیڈکوارٹرز میں اس سلسلے میں دی جانے والی ایک بریفنگ کے دوران ریلوے حکام نے بتایا کہ ٹرینوں کی آمدورفت میں تاخیر کی وجہ مختلف آبادیوں کا بارشی پانی ٹریک پر آنے اور شارٹ سرکٹ کی وجہ سے سگنلنگ کے نظام متاثر ہونا ہے۔

وفاقی وزیر ریلویز نے کہا کہ بارش میں سگنلنگ اور پانی کے نکاس کے مسائل حل کرنے کے لئے طویل المدت اور قلیل المدت دونوں سطح کے منصوبوں پر جاری کام کو مزید تیز کیاجائے۔ وزیر ریلویز نے ہدایت کی کہ ملک بھر میں ٹریک سے بارشی پانی کے نکاس اور سگنلنگ کے مسائل کے حل کے لئے ماسٹر پلان تیار کیا جائے اورسی پیک کے تحت ایم ایل ون کی اپ گریڈیشن سے پہلے حیدر آباد سمیت مختلف مقامات پر مسئلے کے حل کے لئے ترجیحی بنیادوں پر کام کیا جائے۔اجلاس میں چیف ایگزیکٹوآفیسر ریلویزمحمد جاوید انور،ایڈیشنل جنرل منیجر انفراسٹرکچر ہمایوں رشید،ایڈیشنل جنرل منیجر ٹریفک عبدالحمید رازی، مشیر ریلویزانجم پرویز، اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

مزید :

لاہور -