دبئی کے حکمران شیخ محمد بن المختوم نے قطرکو عرب اتحاد میں واپسی کے لئے نظم لکھ ڈالی

دبئی کے حکمران شیخ محمد بن المختوم نے قطرکو عرب اتحاد میں واپسی کے لئے نظم ...
دبئی کے حکمران شیخ محمد بن المختوم نے قطرکو عرب اتحاد میں واپسی کے لئے نظم لکھ ڈالی

  

دبئی(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھائیو ں میں لڑائی اور پھر صلح کی تدابیر یں بھی اپنے ہی انداز میں مختلف اور منفرد ہوتی ہیں اورامیر دبئی نے قطر کو سمجھانے نظم لکھ ڈالی ہے تفصیلات کے مطابق دبئی کے حکمران شیخ محمد بن المختوم نے قطرا ور دیگر عرب ممالک کی بڑھتی کشیدگی کے پیش نظر قطر کو راہ راست پر لانے کیلئے ایک نظم لکھی ڈالی ہے اور قطرکو خلیجی ممالک کے اتحاد میں واپسی کیلئے انسٹاگرام پر نظم لکھی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اب وقت ہے کہ بغیر کسی نفرت اور بغض کے اور ایک دوسرئے کی حفاظت کی خاطر ایک ہو جاﺅ۔نظم میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات اپنے ہمسایہ ملک قطر کیلئے عظیم جذبہ رکھتا ہے کہ وہ سب ایک ہی قبیلے کی ایک ہی قوم ہیں۔انھوں نے لکھا کہ وہ قطر کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ خلیجی ممالک کے اتحادمیں شامل ہو جائے ہم قطر کو یہ نصیحت کرتے رہیں گے کہ رسول اللہ نے اپنی ایک حدیث میں فرمایا تھا کہ راہ بھٹکنے والی بھیڑ کو بھیڑیا کھا جاتا ہے اگر قطر عرب اتحاد میں رہتا ہے تو ہی بھیڑیوں کے گروہ سے بچ سکتا ہے۔

نظم کیساتھ امیر دبئی شیخ محمد بن المختوم اور ابوظہبی کے ولی عہد شیخ زیدبن النہیان کی تصویر بھی لگائی گئی ہے اور نظم میں یہ بھی کہاہے کہ شیخ زید انکے بھائی ہیں اور وہ دونوں دل وجان سے ملک کی حفاظت کیلئے ایک دوسرے کیساتھ کھڑے ہیں انھوں نے لکھا ہے کہ مذاکرات کے دروازے ہمیشہ کیلئے کھلے ہیں او ر جو بھی اختلافات ہوں ہم اپنے ہمسایہ کی حفاطت کریں گے۔

الدَّربْ واضحْ ---- ---- خــيـلْ الـمـعـاني جَـريَـهـا بـالـلِّساني والـشَّـاعـر إيـسَـمَّـا لـسـانِهْ حـصـانهْ وأنـــا عـلـىَ الـخـيلينْ رَبِّــي هـدانـي عــلـىَ الـرِّمـكْ والـسـابقهْ فــي بـيـانِهْ تـرنـيـمـها عـــزفْ ولــحـونْ الأغــانـي وتَـفـخـيـمها لـلـصـافـيهْ فـــي دنــانـهْ والـلِّـي هـويـتهْ وهــو هــواهْ إهـتواني مـــنْ عــقـبْ هـجـرانـهْ تـغـيَّـر زمـانِـهْ لاهـــــوُ تـــريَّــا أوْ تــهــيَّـا وجــانــي ولا آنــا عـشـانهْ كـنتْ أرضـىَ هـوانهْ يــامــهـرةٍ لـــــي بـالـتِّـغَـلِّـي تــبـانـي كــانـتْ نـصـيبي عَــنْ فــلانْ وفـلانـهْ أغـلـيتها مـغـلي الـغـلاَ وجـيتْ عـاني لـلغاليْ الـلِّي فـي الـغلا خَـذْ ضمانِهْ فـــارسْ حـيـاتـهْ فــي ثـبـاتهْ كـفـاني أثـبـتْ مــنْ أثـبَـتْ ثَـبْتْ ثـابتْ جَـنانِهْ حـصـنِهْ حـصـينْ مـحـصَّنٍ بـالعَياني مـتـحـصِّنْ بـحـصـنِهْ لــنـارَهْ ودخـانـهْ شـاهـدْ شِـهَدْ عـنْ مـحنةٍ وإمـتحاني عــنْ شـاهدْ ومـشهودْ حـانْ إمـتحانهْ وانــــا مــــودِّي دونْ حــــقٍّ جـفـانـي وحـاوَلـتْ أثـنـي عــنْ مـسـارَهْ عـنـانِهْ وعـنـدي دلـيـلْ إنْ لـيلْ يـظلَمْ هـداني عـيـنهْ عـلـىَ شـعـبهْ تـبـاتْ إسْـهَـرانِهْ عـونـي وأخـويِـهْ وإنْ أنـاديـهْ جـانـي وإذا يــنــاديـنـي ألَـــبِّـــي عــشــانـهْ هــــذاكْ بـوخـالـدْ ومـــا عــنـهْ ثــانـي اللهْ رفَـــــعْ قَــــدرَهْ وبـالـعَـقـلْ زانــــهْ والـوَقـتْ فــي أمــرَهْ وطــوعْ الـبـناني مــنْ هـيـبتهْ تـمـوتْ الـنِّفوسْ الـجَبانِهْ أنـــــا وهــــوهْ لــدارنــا بـالـضِّـمـاني عَ قــلــبْ واحـــدْ حـافـظـينْ الأمــانِـهْ مـنْ غيرْ شَكْ إنصونْ شَعبٍ مصاني ونـــــرِدْ عـــدوانــهْ ونــحــفَـظْ كــيـانـهْ ومـنْ سـالفٍ في الوقتْ عشنا زماني مـــعْ جـارنـا والـجـارْ أخْـلَـفْ رهـانـهْ والـجارْ قَـبلْ الـدَّارْ جـا فـي الـمعاني وكـنَّـا نـعـينهْ وهــوُ لـنـا فــي الإعـانِهْ مــنْ مـنـبَتٍ واحــدْ وشَـعـبْ وكِـياني دَمْ ولَــحَـمْ واحدْ وأرضْ وديــــانِــــــهْ وتَــدري قـطَـرْ أنَّــا لَـهـا ظِــلْ دانــي عــنْ الـغـريبْ وعــنْ ضـعـيفْ الـمكانهْ مــا هـي مـصالحْ بـالسياسهْ تـهاني يـاغـيـرْ خـــوِّهْ جـــارْ والــحَـظْ خـانِـهْ وواجـــبْ عـلـيـنا نـنـاصحهْ بِـلْـعلاني إنْ حَــطْ لــهْ أفـعـىَ رَمِــلْ فـي ثـبانِهْ والــذِيـبْ يـاكـلْ م الـكـبارْ الـسِّـماني ســاعَـةْ تــغـادرْ سـربـهـا بـإسـتـهانهْ

A post shared by Mohammed bin Rashid Al Maktoum (@hhshkmohd) on

مزید : بین الاقوامی